14 December, 2016 21:16


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

14-DECEMBER-2016

مسلم لیہگ ن نے فیصلہ کیا تھا کہ وہ پارلیمنٹ میں پاناما لیک پر بحث کی حمایت کرے گی۔طلال چوہدری کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

مسلم لیگ ن چاہتی ہے کہ پاناما کیس پر اپوزیشن بھی بات کرے اور ہم بھی بات کریں۔ طلال چوہدری

روایت ہے کہ جب کوئی کیس عدالت میں ہوتا ہے تو اس پر پارلیمنٹ میں بات نہیں کی جاتی۔ طلال چوہدری

پی ٹی آئی نے ہمیں پارلیمنٹ میں بولنے نہیں دیا اور شور کرتے رہے۔ طلال چوہدری

ایک طرف طلال چوہدری کہہ رہے ہیں کہ مسلم لیگ ن چاہتی ہے کہ پارلیمنٹ میں پاناما پر بحث ہو لیکن دوسری طرف وہ کہہ رہے ہیں کہ کیس عدالت میں ہے بات نہیں کرنی چاہئیے۔ سعید غنی

پیپلز پارٹی شروع سے کہتی رہی ہے کہ قومی مسائل کو پارلیمنٹ میں زیر بحث آنا چاہئیے۔ سعید غنی

وزیراعظم نے پارلیمنٹ میں جو تقریر کی اس میں تضادات موجود ہیں۔ سعید غنی

پارلیمنٹ میں پاناما کیس پر بحث ہو رہی تھی کوئی شہادت پیش نہیں کی جا رہی تھی۔ اسد عمر

وزیراعظم نے پارلیمنٹ میں جھوٹ بولا اس پر اپوزیشن کی تحریک استحقاق بنتی ہے۔ اسد عمر

سپیکر نے اپنے چیمبر میں بیٹھ کر ہماری تحریک استحقاق کو ریجیکٹ کر دیا وہ ایسا نہیں کر سکتے۔ اسد عمر

پی ٹی آئی آج اس لئیے پارلیمنٹ میں آئی کیونکہ چالیس دنوں کی غیر حاضری کے بعد ان کی رکنیت ختم ہو جانی تھی۔ طلال چوہدری

مسلم لیگ ن کے بیشتر ارکان اور خود وزیراعظم چالیس دن کیا کبھی بھی پارلیمنٹ میں نہیں آتے لیکن رکنیت منسوخ نہیں ہوتی۔ اسد عمر

پی ٹی آئی نے سب سے پہلے پاناما کیس میں پارلیمنٹ کا فورم استعمال کیا بعد میں عدالت گئی۔ اسد عمر

مسلم لیگ ن کی دلی خواہش ہے کہ وہ فوج پر پی ٹی آئی کی مدد کرنے کا الزام لگائے لیکن مردوں کی طرح نام نہیں لیتی۔ اسد عمر

آج پارلیمنٹ میں بحث یہ تھی کہ وزیراعظم نے غلط بیانی کی اس پر بحث ہو سکتی ہے۔ سعید غنی

دو ہزار اٹھارہ کے الیکشن کے بعد کے پی کے میں بھی مسلم لیگ ن کی حکومت بنے گی۔ طلال چوہدری

اس وقت بھی کے پی کے میں پی ٹی آئی کی حکومت ہماری مہربانی سے بنی ہے ہم اپنی حکومت بنا سکتے تھے۔ طلال چوہدری

میرا تین سال سے مسلم لیگ ن کو چیلنج ہے کہ ہمت ہے تو کے پی کے سے پی ٹی آئی کی حکومت ختم کر کے دکھائے۔ اسد عمر

پارلیمنٹ سے غیر حاضری میں حمزہ شہباز پہلے جبکہ وزیراعظم دوسرے نمبر پر ہیں۔ اسد عمر

حکومت کو چاہیے کہ پارلیمنٹ میں اپوزیشن کے بل کو پاس ہونے دے ورنہ ہنگامہ ہو گا۔ سعید غنی

پارلیمنٹ کام کرے گی تو ہم ساتھ دیں گے پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی کی تحریک استحقاق پر بات ہونی چاہئیے۔ اسد عمر

وزیراعظم نے پارلیمنٹ میں سچ نہیں بولا غلط بیانی سے کام لیا اس پر بحث ہو گی ورنہ کل بھی ہنگامہ ہو گا۔ اسد عمر

مسلم لیگ ن چاہتی ہے کہ پارلیمنٹ میں پاناما پر بات ہو لیکن اپوزیشن ایسا نہیں کرنے دے گی۔ طلال چوہدری

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s