26 December, 2016 22:57


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

26-DECEMBER-2016

زرداری صاحب ڈیڑھ سال کے بعد پاکستان آئے ہیں میری ان سے ملاقات ہوئی ہے میں نے انہیں کہا ہے اسلام آباد آیں۔ چوہدری شجاعت حسین کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

زرداری صاحب نے کہا ہے کہ وہ جنوری کے پہلے ہفتے میں اسلام آباد آیں گے۔ شجاعت حسین

زرداری صاحب اسلام آباد آیں گے تو ان سے اپوزیشن جماعتوں کا اتحاد بنانے پر بات ہو گی۔ شجاعت حسین

یہ بات زرداری صاحب سے ملاقات کے بعد طے ہو گی کہ کن نقاط پر اتحاد ہو سکتا ہے۔ شجاعت حسین

پاناما کا کیس سپریم کورٹ میں ہے اور وہی اس کا فیصلہ کرے گی اور میرے خیال میں اس کیس کا فیصلہ ہونا ہی ہونا ہے۔ شجاعت حسین

پنڈی والے کوئی سیاسی لوگ نہیں ہیں کہ زرداری صاحب کے ان کے ساتھ معاملات ٹھیک کئیے جاتے۔ شجاعت حسین

محترمہ بینظیر بھٹو بہت بڑی لیڈر تھیں پیپلز پارٹی کے کارکنوں کو ان کی برسی منانا چاہئیے۔ مائزہ حمید

پیپلز پارٹی جمہوریت میں یقین رکھنے والی جماعت ہے میرا خیال ہے کہ وہ حکومت کے خلاف سڑکوں پر نہیں آئے گی۔ مائزہ حمید

پیپلز پارٹی کے چار مطالبات ہیں میں سمجھتا ہوں کہ وہ جائز مطالبات ہیں۔ عارف علوی

مجھے ڈر ہے کہ پیپلز پارٹی اپنے چار میں سے کچھ مطالبات مان لئیے جانے پر ہی راضی نہ ہو جائے۔ عارف علوی

پیپلز پارٹی کا یہ مطالبہ کہ وزیرخارجہ ہونا چاہئیے درست ہے کیونکہ وزیرخارجہ کے نہ ہونے سے بہت سے مسائل کا سامان ہے۔ عارف علوی

بینظیر بھٹو کی پالیسی زوالفقار علی بھٹو والی تھی اور ان کی پالیسی غریبوں کے لئیے تھی۔ ناید خان

آج کی پیپلز پارٹی زرداری لیگ ہے زرداری صاحب حادثاتی طور پر پارٹی سربراہ بن گئے میں نے ان کو نہ کبھی لیڈر مانا ہے اور نہ کبھی مانوں گی۔ ناہید خان

پیپلز پارٹی پورے ملک کی ایک جماعت تھی لیکن زرداری صاحب نے اسے صرف ایک صوبے تک محدود کر دیا ہے۔ ناہید خان

زرداری صاحب نے پیپلز پارٹی کے ساتھ وہ کیا ہے جو ضیا۶الحق بھی نہیں کر سکا تھا۔ ناہید خان

زرداری پانچ پانچ سال صدر رہے وزیراعظم ان کے تھے ایجنسیاں ان کی تھیں لیکن زرداری نے بی بی کی شہادت کی تحقیقات شروع ہی نہیں کیں۔ ناہید خان

بینظیر بھٹو کی شہادت کی تحقیقات نہ آصف علی زرداری کی کبھی ترجیح تھی اور نہ ہے۔ ناہید خان

بلاول کہتے ہیں کہ انہیں آج تک اپنی ماں کی شہادت پر انصاف نہیں ملا تو غریب کو کیا ملے گا انہوں نے یہ سوال اپنے والد سے کیوں نہیں کیا۔ ناہید خان

بینظیر کو شہید کرنا اگر عالمی سازش تھی تو اس کو لوکل سطح پر مدد دی گئی اور لوکل تھے تو دیکھنا چاہئیے کہ کون لوگ تھے۔ ناہید خان

بی بی کی شہادت کے تیرہ مہینے کے بعد یونائیٹڈ نیشن سے تحقیقات کروائی گئیں اور اس سے جو جرم کے بارے میں حصہ نکالا گیا وہ کیوں نکالا اور کس نے نکالا۔ ناہید خان

اگر بینظیر بھٹو کو بیت اللہ محسود نے مارا تھا تو پھر بیت اللہ محسود کو کس نے مارا تھا قوم کو پتہ لگنا چاہئیے۔ ناہید خان

میری تحقیقاتی ٹیم کے ساتھ پانچ ملاقاتیں ہوئیں اور میں نے ایمانداری کے ساتھ ان کو تفصیلات بتائیں۔ ناہید خان

بینظیر بھٹو کا دوپٹہ زرداری صاحب اور ان کے خاندان کے پاس تھا ہمارے پاس نہیں تھا وہ اس کا جواب دیں۔ ناہید خان

بینظیر کی شہادت کی جگہ سے اگر نشانات مٹائے گئے تو مشرف صاحب کو بھی پکڑیں۔ ناہید خان

مشرف کوئی آسمان سے اتری ہوئی چیز نہیں ہیں ان سے بی بی کی شہادت کے متعلق سوال کیا جا سکتا ہے۔ ناہید خان

بی بی کی برسی آتی ہے تو پیپلز پارٹی والے کہتے ہیں کہ وہ اہم اعلان کریں گے بی بی کے قاتلوں کا پتہ چل گیا ہے بعد میں خاموش ہو جاتے ہیں۔ ناہید خان

بی بی کے قاتل ایک تو وہ تھے جو موقع پر خود بھی دھماکے میں مارے گئے اور ایک وہ تھے جو سہولت کار تھے وہ جیل میں بند ہیں۔ قمر زمان کائرہ

جن لوگوں نے شواہد مٹائے وہ بھی جیل گئے کچھ کی ضمانت ہو چکی ہے اور کچھ آج بھی جیل میں ہیں۔ کائرہ

جہاں تک میرا علم ہے بیت اللہ محسود تک تو بات گئی تھی لیکن اس سے آگے کڑیاں نہیں مل سکیں۔ کائرہ

دنیا میں جہاں بھی ہائی پرفائل قتل کے کیس ہوئے وہ آج تک نہیں پکڑے گئے۔ کائرہ

بینظیر بھٹو کی شہادت پر یو این او اور سکاٹ لینڈ یارڈ سے جو تحقیقات کروائی گئیں وہ وقت اور پیسے کا ضیاع ثابت ہوئیں۔ عارف علوی

پیپلز پارٹی پر کرپشن کے الزامات بھی ہیں اور پاناما پر ان سے جس موقف کی توقع تھی وہ انہوں نے نہیں لیا۔ عارف علوی

میں نے اپنی پارٹی کی طرف سے پارلیمنٹ میں نیب کے پری بارگین کے قانون کے خلاف بل پیش کیا ہے جس پر آج تک عمل نہیں ہوا۔ عارف علوی

حکومت نیب کے قانون میں اپنی مرضی کی تبدیلی کرنا چاہتی ہے کیونکہ نیب کے قانون کی ایک شق ہے جس کے مطابق نواز شریف کو منی لانڈرنگ کا جواب دینا پڑے گا۔ عارف علوی

احتساب کمشن کے پی کے کے سربراہ نے پی ٹی آئی کے لوگوں کا نام لیا تھا اس لئیے ان کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا۔ مائزہ حمید

پیپلز پارٹی نے اپنی حکومت میں جب اٹھارویں ترمیم پیش کی تو اس میں احتساب کا بھی جامع بل شامل تھا لیکن مسلم لیگ ن نے ہمیں سپورٹ نہیں کیا تھا۔ کائرہ

یہ حقیقت ہے کہ حکمران طاقتور لوگ اور اہم اداروں کے سربراہ اپنے احتساب کے بل اتنی آسانی سے نہیں بنایا کرتے۔ کائرہ

میرے چیرمین نے یہ کہا ہے کہ اگر حکومت نے ان کے چار مطالبات نہیں مانے تو پھر سڑکوں پر آیں گے اور لگ پتہ جائے گا۔ کائرہ

بلوچستان سے پکڑے جانے والے بندے سے پری بارگین کرنے سے اس کے سارے لنکس ختم ہو گئے کیونکہ کرپشن ہوتی ہے تو اس کا کور اپ بھی ہوتا ہے۔ عارف علوی

پاناما پر پی ٹی آئی کے پاس کوئی ثبوت نہیں ہے۔مائزہ حمید

ہمارے وکیل کو سپریم کورٹ میں بات کرنے کا موقع ہی نہیں دیا گیا۔ مائزہ حمید

پاناما پر حکومت نے جتنی پوزیشن تبدیل کی ہیں اس پر کچھ بولنے کی ضرورت نہیں ہے۔ کائرہ

پیپلز پارٹی نے جو قانون کا بل پارلیمنٹ میں پیش کیا ہے اس کے بغیر پاناما کیس کی کوئی واضع شکل باہر نہیں نکل سکے گی۔ کائرہ

N A E E M M A L I K
http://naeemmalik.wordpress.com/
00-92-332-4386868

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s