15 February, 2017 20:55


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

15-FEBRUARY-2017

ملا فضل اللہ افغانستان میں بیٹھا ہے برہمداغ بگٹی بھی دہشت گردی کروا رہا ہے اسے را کی مدد بھی حاصل ہے۔ آج کے واحد مہمان پرویز مشرف کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

پی ایس ایل کا فائنل لاہور میں ہونے جا رہا تھا اس متاثر کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

ضرب عضب کامیاب آپریشن ہے لیکن ابھی دہشت گردی ختم نہیں ہوئی ہے۔

پنجاب فرققہ وارانہ دہشت گردی کا گڑھ ہے اس میں مسلم لیگ ن کے سیاست دان بھی ملوث ہیں۔

دہشت گردی کے خلاف آپریشن پکے ہونے چاہئییں ان کو بیچ مہیں نہیں چھوڑنا چاہئیے۔

ایان علی نے کئی بار منی لانڈرنگ کی ڈاکٹر عاصم کا کیس بھی درمیان میں لٹکا ہوا ہے۔

حافظ سعید کے بارے میں ہم کنفیوژ ہیں یہ دہشت گرد نہیں ہیں بھارت ان کے خلاف ہے۔

دہشت گرد حافظ سعید نہیں ہیں بھارت ہے جس کی فوجیں کشمیریوں پت تشدد کر رہی ہیں۔

حافظ سعید کو رہا کرنا چاہئیے زلزلے کے دوران انہوں نے بہت اچھا کام کیا تھا یہ طالبان کے خلاف ہیں۔

حافظ سعید نے دینی یوتھ کو فلاحی کاموں کی طرف لگایا ہے۔

مولانا مسعود اظہر نے پاکستان کے اندر دہشت گردی کروائی ہے میرے اوپر بھی انہوں نے ہی حملہ کیا تھا۔

بھارت دنیا سے پریشر ڈلوا رہا ہے کہ حاظ سعید پر پابندی لگاؤ ورنہ دنیا ہمیں تنہا کر دے گی۔

ڈان لیکس کی خبر اندر سے لیک کروائی گئی تھی تا کہ فوج پر پریشر ڈالا جا سکے۔

میرے فوج کے ساتھ بہت اچھے تعلقات ہیں میں نے پینتالیس سال فوج میں کام کیا ہے دس سال میں ان کا کمانڈر بھی رہا ہوں۔

آرٹیکل چھ کا کیس ابھی ختم نہیں ہوا ہے یہ ابھی بھی موجود ہے اور فوج اس سلسلے میں مجھ سے ہمدردی کرے گی۔

جنرل امجد ایسا آدمی نہیں کہ شریف خاندان کی جائیداد کا ریکارڈ اٹھا لے گیا میں بھی ایسا آدمی نہیں ہوں اس کا ریکارڈ کہیں تو ہو گا۔

ایک دفعہ پیپلز پارٹی آتی ہے اور ایک دفعہ مسلم لیگ ن یہ جب بھی آتے ہیں ریکارڈ جلا دیتے ہیں۔

ساری دنیا نے دیکھا تھا کہ ان کے دور میں لندن میں ہمارے سفیر نے ریکارڈ کہیں منتقل کر دیا تھا۔

شریف فیملی کے مقدمات کو دیکھنا میرا نہیں اداروں کا کام تھا میں کبھی ان کے معاملات میں نہیں گھسا تھا۔

نواز شریف نے سعودی عرب کی مداخلت کی وجہ سے دس سال کا معاہدہ کیا تھا اور ملک سے چلے گئے تھے۔

نواز شریف سعودی عرب میں سٹیٹ گیسٹ نہیں تھے بس ویسے ہی وہاں رہ رہے تھے۔

جب میں حکمران تھا میں چوبیس گھنٹے اور ساتوں دن کام کرتا تھا ۔

جب تک میں حکومت میں تھا میں نے کبھی کسی سے کوئی فائدہ حاصل نہیں کیا تھامیرا مقابلہ دوسروں کے ساتھ نہ کیا جائے۔

شاہ عبداللہ نے دو ہزار نو میں میری مدد کی تھی یہ پرائیویٹ معاملہ ہے تفصیل نہیں بتاؤں گا میں نے اسی سے لندن کا فلیٹ خریدا تھا۔

شاہ عبداللہ میرے لئیے بھائیوں کی طرح تھے وہ صرف میرے سامنے سگریٹ پیتے تھے میں ان کی گھر بہت اندر تک چلا جاتا تھا۔

خانہ کعبہ میں شاہ عبداللہ نے خود مجھ کو بلا یا اور اندر لے کر گئے جمعے کی نماز میں بھی میں پیچھے کھڑا تھا تو انہوں نے مجھے آّگے بلایا۔

کوئی ثابت کر دے کہ حکومت میں رہتے ہوئے اگر میں نے ملک سے باہر کوئی پراپرٹی بنائی ہو تو بات بنتی ہے۔

میں ملک سے باہر لیکچر دیتا تھا تو ایک لیکچر کے مجھے ایک لاکھ سے لے کر سوا لاکھ ڈالز تک ملتے تھے۔

پاکستان نیچے جا رہا ہے عوام غریب سے غریب تر ہو رہے ہیں اس کو ٹھیک کرنا ہو گا اس کو ٹھیک کرنا ہے اس کے لئیے ایک تیسری سیاسی طاقت بننی چاہئیے۔

پاکستان کو ٹھیک کرنے کے لئیے تمام مسلم لیگوں کا ایک ہونا چاہئیے اور مہاجروں کو ایک جگہ اکٹھا ہونے کی ضرورت ہے۔

مہاجر مجھے اپنا لیڈر سمجھتے ہیں کراچی میں جا کر پوچھیں مہاجر مجھے کیا سمجھتے ہیں۔

ایم کیو ایم کے اب جو لیڈر ہیں اگر ان کی شخصیت ہو گی تو مہاجروں کو جوڑ لیں گے ورنہ یہ بکھرے رہیں گے۔

مجھے اجازت دیں مجھ پر مقدمات ختم کریں میں جلسے کروں تو میں دکھاؤں کہ میں کیا کر سکتا ہوں۔

میں مقدمات کا سامنا کرنے کو تیار ہوں لیکن حکومت عدالتوں پر اثر انداز ہو رہی ہے چوہدری افتخار سیاست میں گھسے ہوئے تھے ان کا اپنا ایک ایجنڈا تھا۔

یہ باتیں گھسی پٹی ہیں کہ شریف خاندان کے خلاف پاناما کیس میں ثبوت نہیں ہیں ثبوت ہیں ان کو پکڑیں۔

http://naeemmalik.wordpress.com/

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s