2 June, 2017 09:50


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

01-june-2017

یہ بات درست نہیں ہے کہ مسلم لیگ ن نے نہال ہاشمی سے چڑھائی کروائی ہے انہوں نے جو کہا وہ ان کا اپنا بیان ہے۔ طارق فضل چوہدری کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

یوم تکبیر کے سلسلے میں ایک تقریب تھی وہاں میڈیا بھی مدعو نہیں تھا نہال ہاشمی نے وہاں تقریر کی جسے کسی نے موبائل فون پر وڈیو بنا لی۔

جیسے ہی ہمیں نہال ہاشمی کی تقریر کا پتہ چلا نواز شریف نے ان کے خلاف کاروائی کی ان سے استعفی لے لیا۔

ہم متکبر نہیں ہیں عمران خان کو دھرنے کے دوران ہم اٹھا کر گھر میں بند کر سکتے تھے لیکن ہم نے ایسا نہیں کیا۔

سعد رفیق، طلال چوہدری اور رانا ثنا اللہ نے کبھی ججوں کے بارے میں نازیبا زبان استعمال نہیں کی۔

پی ٹی آئی کے شفقت محمود نے کہا کہ

پاناما کیس کی وجہ سے حکومت نے سپریم کورٹ کے خلاف جا بوجھ کر ایک جنگ کا آغاز کر رکھا ہے۔

جنگ کا آگاز سعد رفیق نے کیا بعد میں اس میں طلال چوہدری، رانا ثنا اللہ شامل ہوئے اور اب نہال ہاشمی سے بیان دلوایا گیا ہے۔

مسلم لیگ ن کا ماضی یہ ہے کہ یہ ججوں کو فون کرتے تھے کہ فلاں کے خلاف یہ فیصلہ کر دو یا وہ کر دو۔

فیصلہ مسلم لیگ ن کے حق میں آئے تو اداروں کی عزت کرتے ہیں ورنہ ان کا رویہ آج جیسا ہوتا ہے۔

حکومت نے ججوں کے ریمارکس پرسادہ کاغز پر اپنا رد عمل دیا ہے تا کہ بعد میں اس سے پھر سکیں کہ یہ ان کی طرف سے نہیں تھا۔

حکومت جو کچھ کر رہی ہے یہ ایک سوچی سمجھی سازش ہے۔

پیپلز پارٹی کے مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ

حکومت کا مقصد سپریم کورٹ کو متنازعہ بنانا اور اسے دباؤ میں لانا ہے۔

نواز شریف اور مسلم لیگ ن کی زہنیت بادشاہوں والی ہے۔

نہال ہاشمی استعمال ہوئے ہیں ان کے خلاف ایکشن لے لیا گیا نواز شریف نے سعد رفیق اور رانا ثنا اللہ کے خلاف ایکشن کیوں نہیں لیا۔

حکومت کو طاقت کا گھمنڈ ہے ان میں تکبر ہے یہ فوج اور عدلیہ سے لڑتے ہیں۔

مجھے یقین ہے ایک دن مسلم لیگ ن اپنی طاقت کا غلط استعمال کرے گی لیکن اس کو شکست ہو گی۔

انتخابات کا طریقہ کا ربدلنا چاہئیے ایک صوبے سے ووٹ لے کر حکومت بنا لیتے ہیں اور باقی تین صوبوں کو پوچھتے نہیں ہیں۔

صحافی عمر چیمہ نے کہا کہ

مسلم لیگ ن، پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی اپنے خلاف کیس ہونے کی صورت میں اسے لٹکاتے رہتے ہیں۔

مسلم لیگ ن والوں نے اب تک سپریم کورٹ کے بارے میں جو کچھ کہا ہے نہال ہاشمی کا بیان ان میں سے سخت ترین ہے۔

ججوں کو کوئی بیان دیتے وقت محطاط رہنا چاہئیے ان کا ری ایکشن ان کے فیصلوں میں نظر آنا چاہئیے۔

http://naeemmalik.wordpress.com/

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s