17 October, 2017 21:47


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

17-OCTOBER-2017

مجھ پر چار سو ساٹھ ارب روپے کی کرپشن کے الزام کا نواز شریف کو پتہ ہو گا جس نے میرے خلاف مقدمات بنائے۔ آج کے واحد مہمان ڈاکٹر عاصم کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

یہ بات درت نہیں ہے کہ میں نیب کے سات مل کر پیسے کھاتا رہا ہوں یہ بات میرے خلاف میڈیا مہم کا حصہ ہے۔

میری بہن کے گھر پر بھی چھاپہ مارا گیا میں نے اس کے خلاف مدمہ بھی درج کروایا ہوا ہے۔

نواز شریف عجیب زہن کا آدمی ہے اس نے زرداری کو تنگ کرنے کے لئیے میرے خلاف مقدمہ بنوایا۔

میں عدالت کے زریعے رہا ہوا ہوں کوئی ڈیل نہیں ہوئی ہے۔

میرے علم میں یہ بات نہیں ہے کہ زرداری نے کسی اعلی فوجی افسر سے ڈیل کر کے میری رہائی کروائی۔

انور مجید بزنس مین ہے اس کی شوگر مل ہے اس کے کاروبار کو ناجائز کہنا درست بات نہیں ہے۔

اویس ٹپی حکومتی معاملات میں دخل دیتا تھا میں اس کے متعلق اس سے زیادہ کچھ نہیں جانتا۔

میرا اویس ٹپی کے متعلق نیب میں بیان ایسے ہی لیا گیا جیسے پاکستان کی پولیس لیتی ہے۔

میں نے اویس ٹپی کے متعلق لکھا ہوا بیان پڑھا تھا اور وہ بیان چوہدری نثار مسٹر بین نے لکھوایا تھا۔

نیب نے اب تک شریف خاندان کو ای سی ایل لسٹ پر نہیں ڈالا حالانکہ ان کے خلاف ثبوت بھی موجود ہیں۔

پاکستان میں شریف خاندان کے متعلق اور قانون ہے جبکہ پیپلز پارٹی کے بارے میں اور ہے۔

نواز شریف نیب اور بیوروکریسی کو پیسے کھلاتا ہے اس کے پاس بہت پیسہ ہے۔

مجھ پر جسمانی تشدد تو نہیں کیا گیا لیکن زہنی طور پر کیا گیا مجھے ایکی ٹانگ پر کھڑا کیا جاتا رہا۔ مجھ پر دباؤ ڈالا جاتا رہا کہ زرداری کے خلاف بیان دے دو۔

مجھ سے ایک مجسٹریٹ کے سامنے گن پوائنٹ پر بیان لیا گیا۔

میں انیس سو اناسی سے بیاسی تک فوج میں کیپٹن کے عہدے پر کام کرتا رہا۔

زرداری پٹارو کالج میں مجھ سے جونئیر تھے وہ چھوڑ گئے لیکن میں پڑھتا رہا۔

میں نے نیب کے سامنے جن لوگوں کے نام لئیے کہ وہ زرداری کے لئیے کام کرتے ہیں میں ان کو جانتا تک نہیں ہوں۔

میرا تفتیشی افسر میرے متعلق ایسی باتیں کہتا تھا جو مجھے معلوم بھی نہیں ہوتی تھیں وہ کہتا تھا کہ اس پر دباؤ ہے۔

موجودہ حکومت ملک کو معاشی طور پر بہت نیچے لے گئی ہے۔

زر مبادلہ کے زخائر بیس سے تیرہ ارب ڈالر تک آ گئے ہیں اور ان میں ہر مہینے ایک ملین ڈالر کی کمی ہو رہی ہے۔

نیب کے قانون میں وقت کی کوئی قید نہیں ہونی چاہئیے ثبوت ہوں تو بیس سال بعد بھی کیس چلنا چاہئیے۔

نواز شریف پاکستان کی عزت اور اتحاد میں یقین نہیں رکھتا وہ صرف بھارت کے ساتھ کاروبار کرنا چاہتا ہے۔

بظاہر نواز اور شہباز شریف کی لڑائی ہو رہی ہے لیکن زہنی طور پر وہ دونوں ایک جیسے ہیں۔

مریم نواز شریف کی سیاسی وارث ہے اس کے نزدیک چوہدری نثار اور شہباز شریف کی کوئی جگہ نہیں ہے انہیں جانا ہو گا۔

https://nadeemmalik.wordpress.com/

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s