21 March, 2018 20:55


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

21-MARCH-2018

کوئی پتہ نہیں کہ میرے بیٹے کو کس نے اغوا کر کے مارا۔ رانا منیر کی والدہ کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

میرا بچہ مغرب کی نماز پڑھنے گیا تھا پھر واپس نہیں آیا۔

میں بے سہارہ اور بیوہ ہوں جن لوگوں نے میرے بچے کو مارا ہے انہیں پھانسی دی جائے۔

ڈی سی او خوشاب ابرار حسین نیکو کار نے کہا کہ

ہمیں صرف ڈی این اے رپورٹ کا انتظار ہے ورنہ ہم قاتل تک پہنچ چکے ہیں۔

جس دن بچہ گھر سے نکلا اسی دن اس کو مار دیا گیا لیکن اس کی لاش پانچ دن بعد ملی۔

پیپلز پارٹی کی پلوشہ خان نے کہا کہ

زینب کے کیس کے بعد میڈیا اور لوگوں کی توجہ کے بعد بھی یہ سلسلہ رکا نہیں ہے۔

بچوں سے زیادتی کی کیس اس وقت تک نہیں رکیں گے جب تک کچھ لوگوں کو سر عام پھانسی نہیں دی جائے گی۔

وزیراعلی کو اس کیس کا نوٹس لینا چاہئیے اور اس بے سہارہ عورت کی مدد کرنی چاہئیے۔

کب نواز شریف کے اپنے گلے میں مصیبت پڑی ہے تو اب کہنا کہ وہ انقلابی ہیں یقین نہیں کیا جا سکتا۔

دہشت گردی کے مسئلے پر بھی نواز شریف نے کہا تھا کہ پنجاب کو چھوڑ دو باقی جو مرضی کرو۔

نواز شریف لوگوں کو بیوقوف بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

عدالت کا فیصلہ قبول نہ کرنے کا حق کتنے پاکستانیوں کو دیا گیا ہے اور عدالت کے خلاف مہم چلائی جا رہی ہے۔

پیپلز پارٹی کے لوگوں کے نام ای سی ایل میں فوری طور پر ڈال دئیے جاتے ہیں مسلم لیگ ن کے لوگوں سے جو سلوک کیا جا رہا ہے سب کے سامنے ہے۔

دانیال عزیز کی سربراہی میں ایک کمیٹی بنا دی گئی ہے آئیندہ وہ فیصلہ کرے گی کہ کس کا نام ای سی ایل میں ڈالنا ہے۔

پی ٹی آئی کے عارف علوی نے کہا کہ

چھوٹے بچوں کو بہت جلد بہکا لیا جاتا ہے ماں باپ کو بچوں کی تربیت کرنی چاہئیے۔

سکولوں میں بھی بچوں کی تربیت کا بند وبست ہونا چاہئیے کہ کوئی کہاں ہاتھ لگائے تو وہ نا مناسب ہو گا۔

فرانس کے صدر کو گرفتار کر کے جیل میں رکھا گیا ہے اس کو کہنا چاہئیے تھا کہ عوام کے منتخب آدمی کو کیوں پکڑا گیا ہے۔

اسرائیل کے وزرا اعظم کے خلاف بھی تحقیقات ہو رہی ہیں۔

اگر نواز شریف کے خلاف فیصلہ غلط ہوا ہے تو وہ اپنی بے گناہی کا ثبوت دے دیں۔

فیصلہ خلاف آیا تو سپریم کورٹ پر حملہ کیا گیا۔

مسلم لیگ ن کے ملک احمد خان نے کہا کہ

بچوں سے زیادتی کے واقعات کو روکنے کے لئیے ابھی بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے۔

پولیس میں چائلڈ ابیوز ونگ کے نام سے ایک شعبہ قائم کیا گیا ہے۔

مجرموں کو سزا دینے کے لئیے قانون میں بھی ترامیم کی جا رہی ہیں۔

مسلم لیگ ن نے نواز شریف کی نا اہلی پر بارہ سوالات پوچھے ہیں آج تک ان کا جواب نہیں دیا گیا۔

راؤ انوار کی جے آئی ٹی میں ایجنسیوں کے بندے شامل ہونے چاہئیں تھے لیکن نہیں کئیے گئے لیکن نواز شریف کے خلاف کئیے گئے۔

نقیب محسود کے وکیل فیصل صدیقی نے کہا کہ

ہم راؤ انوار کی گرفتاری پر بہت مطمئین ہیں۔

ریکارڈ کے مطابق چار سو چالیس لوگوں کو پولیس مقابلوں میں مارا گیا لیکن کوئی ایک پولیس والا زخمی بھی نہیں ہوا۔

راؤ انوار کے خلاف نئی جے آئی ٹی نہیں بنائی گئی بلکہ پہلی کو ہی توسیع دی گئی ہے۔

جے آئی ٹی کو تحقیقات مکمل کرنے کے لئیے کوئی وقت نہیں دیا گیا لیکن تجربہ یہ بتاتا ہے کہ وہ زیادہ وقت نہیں لیتی۔

راؤ انوار کا کہنا ہے کہ نقیب کے پولیس مقابلے میں وہ موجود نہیں تھا ہو سکتا ہے کہ ان کی ٹیم نے یہ کام کیا ہو۔

جو کال ریکارڈ کی گئی ہوئی ہے اس سے پتہ چلتا ہے کہ راؤ انوار نقیب کے ساتھ پولیس مقابلہ کرنے والے سٹاف کے ساتھ رابطے میں تھے۔

http://naeemmalik.wordpress.com/

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s