31 May, 2018 20:56


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

31-MAY-2018

آج مجھے یہ پتہ ہے کہ بجلی کا یونٹ چھ روپے سے چودہ تکل پہنچ چکا ہے۔ مبشر لقمان کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

ایک بستر پر کئی کئی مریض لیٹے ہیں لوگوں کو دوائی نہیں ملتی۔

میں شکرانے کے نوافل پڑھوں گا اور اللہ سے دعا کروں گا کہ ہمیں آئیندہ شر انگیز حکمرانوں سے محفوظ رکھے۔

انتخابی اصلاحات نہیں کی گئیں کاغزات نامزدگی میں آپ اپنی کوئی بھی جائیداد کی تفصیلات بتا سکتے ہیں۔

دو ہزار تیرہ کے الیکشن میں جنرل کیانی اور جسٹس افتخار چوہدری نے مسلم لیگ ن کو جتوانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

دو سال کے بعد پاکستان میں کرپشن نہیں رہے گی پاناما کے بعد میڈیا بھی ایکسپوز ہوا ہے۔

پاکستان میں میڈیا جتنا کرپٹ ہے کہیں اور نہیں ہے۔

اقبال شہزاد نے کہا کہ

اچھی بات یہ ہے کہ ایک جمہوری حکومت نے اپنے پانچ سال پورے کئے۔

ابتدائی دو سالوں میں حکومت آئی ایم ایف کے پروگرام پر چل رہی تھی میں نے سمجھا کہ معیشت ٹھیک ہو جائے گی لیکن ایسا نہیں ہوا۔

مسلم لیگ ن کے دور میں تیل پینتیس چالیس ڈالر تک آ گیا لیکن حکومت فائدہ نہیں اٹھا سکی۔

دھرنے کی وجہ سے حکومت پر بہت دباؤ تھا عمران خان کو اس وقت انتخابی اصلاحات کروا لینی چاہئیے تھیں۔

حیدر وحید نے کہا کہ

جب سے مسلم لیگ ن کی حکومت آئی یہ نظر آ رہا تھا کہ کوئی نہ کوئی قوت ان کے کام کرنے کے درمیان رکاوٹ کھڑی کر رہی تھی۔

چیف جسٹس صاحب پچھلے تقریباْ ایک سال سے بہت متحرک دکھائی دے رہے ہیں۔

پانچ سال کے لئیے منتخب کر کے ایک بھاری زمہ داری دی جاتی ہے جب وہ کام نہیں کرتے تو پھر شیطانیاں ہوتی ہیں۔

حکومت نے آ کر وہ کام نہیں کئیے جو کرنا چاہئیے تھے لیکن اسے کام کرنے بھی نہیں دیا گیا۔

پچھلے الیکشن میں ڈبے کھولے گئے تھے لیکن کوئی با ضابطہ دھاندلی سامنے نہیں آئی تھی۔

لاہور میں طاہرالقادری کے جلسے پر لوگوں کے رد عمل سے عمران خان اور آصف زرداری کی سیاست کو کافی دھچکہ لگا۔

نواز شریف نے بہت غلطیاں بھی کیں سپریم کورٹ کو خط لکھا کہ پاناما کی تحقیقات کریں۔

http://naeemmalik.wordpress.com/

31 May, 2018 11:12


?ui=2&ik=7522c83caa&view=att&th=163b4cf7b9aacdfd&attid=0.1&disp=safe&realattid=ii_jhu51u3j0_163b4cf7b9aacdfd&zw

https://www.samaa.tv/videos/NadeemMalik/

https://www.youtube.com/watch?v=NFLLzw6alIY

NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik
30-MAY-2018

TOPIC- PAKISTAN POLITICS

GUESTS- ALI MOHAMMAD KHAN, MOLA BAKSH CHANDEO, JAVED ABBASI

ALI MOHAMMAD KHAN OF PTI SAID

Mr. Khosa is an uncontroversial man but after the reaction on social media against him PTI decided to take his name back.

Where was PML-N when Nawaz Sharif gave the statement in the favor of India?

PML-N cannot understand the politics of Imran Khan where is the person that used to say “Koi sharam hoti hey koi haya hoti hey”.

A person that used to sit in a huge chair now keeps asking in the streets “Mujhey kyon nikala”.

Today the situation at the borders of the Pakistan is very serious it should be considered profoundly.

Nawaz Sharif said in his statement that why Pakistan allows people to go to India and do the terrorism.

We say that the parliament is superior but it needs to prove its superiority.

MOLA BAKSH CHANDEO OF PPPP SAID

PTI politics and all the decisions are not serious.

Today PTI announced that they are going to form a committee to scrutinize the newcomers in the party.

Imran Khan does not have the line of being PM in his hand.

Balochistan assembly decision to postpone the elections should be taken seriously PTI will also support it in the coming days.

The elections should not be postponed they should held on time.

Even if the politician has some dispute on some issue he should never talk against the institution.

There should continuity in the affairs of national security regardless which party is ruling on the country.

JAVED ABBASI OF PML-N SAID

The courts should decide the cases of delimitation as soon as possible the elections should not be delayed because of it.

The elections are not postponed even during the war in the many countries of the world.

PTI took a surprising U turn on the issue of the name of the care taking CM.

Mian Abdul Rasheed said that he has prevailed upon the name of Khosa as care taking CM of Punjab.

If the decision of the people is changed for the benefit of one party its result will not be fruitful.

PTI knows they will face difficulties in the elections in Sindh and Punjab.

No party should talk bad against the institutions to sell its point of view.

http://naeemmalik.wordpress.com/

30 May, 2018 20:54


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

30-MAY-2018

کھوسہ صاحب ایک غیر متنازع آدمی ہیں لیکن ان کا نام آنے کے بعد ایسا رد عمل آیا کہ ہم نے سوچا کہ انہیں ابھی ہٹا دیا جائے۔علی محمد خان کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

مسلم لیگ ن اس وقت کہاں تھی جب نواز شریف نے بھارت کے حق میں بیان دیا تھا۔

عمران خان کی سیاست کی مسلم لیگ ن کو سمجھ نہیں آئے گی ایک بندہ تھا جو کہتا تھا کوئی شرم ہوتی ہے کوئی حیا ہوتی ہے آج وہ کدھر ہے۔

ایک بندہ جو بہت بڑی کرسی پر بیٹھتا تھا آج گلی۹ گلی کہتا پھر رہا ہے کہ مجھے کیوں نکالا۔

آج پاکستان کی سرحدوں پر حالات بہت زیادہ خراب ہیں ان کا کچھ خیال کریں۔

نواز شریف نے اپنے بیان میں کہا کہ ہم کیوں اجازت دیتے ہیں کہ لوگ بھارت جا کر دہشت گردی کریں۔

ہم بڑا کہتے ہیں کہ پارلیمنٹ بالا تر ہے لیکن وہ بڑی بن کر دکھائے تو سہی۔

پیپلز پارٹی کے مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ

پی ٹی آئی کے تمام فیصلے اور سیاست غیر سنجیدہ ہے۔

آج پی ٹی آئی نے کہا ہے کہ وہ ایک کمیٹی بنایں گے اور پارٹؐی میں نئے آنے والوں کی چھان بین کریں گے۔

عمران خان کے ہاتھ میں وزیراعظم کی لکیر نہیں ہے۔

بلوچستان اسمبلی کا فیصلہ کہ انتخابات ملتوی کرنے چاہئییں کو سنجیدگی سے لینا چاہئیے آنے والے دنوں میں پی ٹی آئی بھی اس کی حمایت کرے گی۔

الیکشن ملتوی نہیں ہونے چاہئییں وقت پر ہونے چاہئییں۔

سیاست دان کو اگر کسی بات پر اختلاف بھی ہو گیا ہو تو اداروں کے خلاف بات نہ کرے۔

قومی سلامتی کے فیصلوں میں تسلسل ہونا چاہئیے چاہے کسی پارٹی کی حکومت ہو وہ ان سے بالا تر ہونے چاہئییں۔

مسلم لیگ ن کے جاوید عباسی نے کہا کہ

عدالت کو حلقہ بندیوں پر جلد از جلد فیصلے دے دینے چاہئییں اس سے الیکشن ملتوی نہیں ہونے چاہئییں۔

دنیا کے ملکوں میں جنگوں کے دوران بھی الیکشن ملتوی نہیں کئیے گئے۔

پی ٹی آئی نے آج پنجاب میں نگران وزیراعلی کے مسئلے پر حیرت انگیز یو ٹرن لیا ہے۔

میاں عبدالرشید نے کہا تھا کہ انہوں نے نگران وزیراعلی کا نام منوایا تھا۔

کسی ایک جماعت کو فائدہ پہنچانے کے لئیے اگر عوام کے فیصلے کو روکا گیا تو اس کا نتیجہ اچھا نہیں نکلے گا۔

پی ٹی آئی کو پتہ ہے کہ ان کو سندھ اور پنجاب کے الیکشن میں بہت مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا۔

کسی جماعت کو اپنی بات بیچنے کے لئیے اداروں کے خلاف بات نہیں کرنی چاہئیے۔

http://naeemmalik.wordpress.com/