28 August, 2018 21:02


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

28-AUGUST-2018

حضرت محمدﷺ سے محبت ہمارے ایمان کا حصہ ہے لیکن ہم احتجاج کرتے ہوئے اپنے گھر کو جلانے لگتے ہیں۔ مسلم لیگ ن کے بلیغ الرحمان ندیم ملک لائیو میں گفتگو

رسول پاک ﷺ کی شان میں گستاخی کرنے کے پیچھے ویسٹ کے کچھ اپنے مقاصد بھی ہوتے ہیں۔

اعتزاز احسن ہمیشہ مسلم لیگ ن کے خلاف شعلہ بیانی کرتے ہیں۔

پیپلز پارٹی کا مسلم لیگ ن کے خلاف رویہ بھی درست نہیں ہے انہوں نے شہباز شریف کی مخالفت کی۔

پی ٹٰی آئی کے فیصل واڈا نے کہا کہ

یہ بات درست ہے ہمیں احتجاج کرتے ہوئے اپنے گھر کو جلانے لگتے ہیں۔

پڑھا لکھا یا ان پڑھ ناموس رسالت کے مسئلے پر ہم سب ایک ہیں۔

نواز شریف نے زراری صاحب کے ساتھ جو سلوک کیا ہے اپوزیشن اس کے بعد متحد نہیں ہو سکتی۔

مسلم لیگ ن کے پاس جس بھی چیز کا الیکشن ہو شہباز شریف ہی امیدوار ہوتا ہے۔

زرداری صاحب کے خلاف مقدمات سیف الرحمان نے بنائے تھے۔

زرداری صاحب پر مقدمات پہلے کے ہیں ان کا ووٹ دینے کے فیصلے کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے۔

وزیراعظم کو مردم شناس ہونا چاہئیے پی ٹی آئی کا سابقہ ریکارڈ اتنا حوصلہ افزا نہیں ہے۔

شاعر دانشور خالد مسعود نے کہا کہ

کسی مسلمان کا ایمان مکمل نہیں ہوتا جب تک وہ رسول پاک ﷺ کو سب سے زیادہ محبت نہ کرے۔

ہم حضرت عیسی علیہ سلام کی شان میں گستاخی نہیں کر سکتے لیکن یہودیوں اور عیسائیوں کو رسول پاک کی شان میں گستاخی کرنے سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔

ہالو کاسٹ کے بارے میں کوئی بات نہیں کی جا سکتی تو پھر رسول پاک ﷺ کی شان میں کیسے گستاخی کی جاتی ہے۔

پیپلز پارٹی اسٹیبلشمنٹ کو پیغام دے رہی ہے کہ وہ متحدہ اپوزیشن کو متحد نہیں رہنے دے گی۔

جب متحدہ اپوزیشن کے امیدوار کو ووٹ دینے کی بات طے ہو گئی تھی تو پھر شہباز شریف کے نام پر اعتراض نہیں ہونا چاہئیے تھا۔

پیپلز پارٹی والے بھی اعتزاز احسن کے نام پر اڑ گئے ہیں کیا ان کے پاس کوئی نام نہیں ہے۔

پیپلز پارٹی نے میٹرک پاس کھرکو گورنر لگا دیا تھا ان پیپلز پارٹی کو میرٹ یاد آ گیا ہے۔

پی ٹی آئی نے بھی خاور مانیکا کے معاملے میں پولیس آفیسر کے سارتھ وہی کام کیا ہے جو مسلم لیگ ن کرتی تھی۔

پیپلز پارٹی کے لطیف کھوسہ نے کہا کہ

دنیا میں رسول پاک ﷺ کی شان میں گستاخی کرنے کے خلاف قانون پاس ہونا چاہئیے۔

ہم مسلمان کسی بھی اللہ کے رسول کے خلاف گستاخی نہیں کر سکتے۔

اللہ کے رسول کے خلاف گستاخی کر کے اسے آزادی رائے کہا جاتا ہے۔

ہمیں یہ بھی بتا دیان چاہئیے کہ ہم رسول پاکﷺ کی شان میں گستاخی پر اپنی جان بھی قربان کر سکتے ہیں۔

رسول پاک ﷺ کی شان میں گستاخی کو دہشت گردی میں شامل کیا جانا چاہئیے۔

میں زرداری کے کیس میں وکیل ہوں پینتیس ارب کے کیس کا زرداری یا فریال تالپور کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے۔

زرداری کے اکاؤنٹ میں پینتیس ارب روپے صدر کے عہدے سے ہٹنے کے بعد آئے اس کیس میں چودہ لوگوں کا نام ہے۔

شہباز شریف نے ایک دفعہ بھی پیپلز پارٹی کے صدر اور وزیراعظم کو تسلیم نہیں کیا۔

طے ہوا تھا کہ صدارتی امیدوار پیپلز پارٹی کا جبکہ وزیراعظم کا مسلم لیگ ن سے ہو گا۔

ہمارے ووٹرز اور ورکرز کو شہباز شریف کے نام پر شدید اعتراض ہے۔

پی ٹی آئی نے ایف اے پاس وائس چانسلرز کا تقرر کیا ہے بلوچستان کے گورنر کا نام واپس لینا پڑا۔

http://naeemmalik.wordpress.com/

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s