31 May, 2016 22:17


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

31-MAY-2016

نواز شریف کا کامیاب آپریشن ہو گیا ہے اور انہیں آئی سی یو میں منتقل کر دیا گیا ہے۔ محمد زبیر کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

وزیراعظم کی بیماری کے باوجود امور سلطنت چلتے رہے انہوں نے وڈیو لنک کے زریعے کیبنٹ میٹنگ میں شرکت کی ہے۔ محمد زبیر

نواز شریف پاکستان کے وزیراعظم ہیں اللہ کا شکر ہے کہ ان کا آپریشن کامیاب رہا ہے۔ عارف علوی

امریکہ جیسے ملک میں اگر صدر کو کوئی مسئلہ ہو جائے تو وہ کسی نہ کسی کو اپنے اختیارات دیتا ہے۔ عارف علوی

ہمیں بھی قانون بنانا پڑے گا کہ ملک کے چیٖف ایگزیکٹو کی غیر موجودگی میں کوئی دوسرا کام کر سکے۔ عارف علوی

کچھ دیر پہلے حسین نواز سے بات ہوئی ہے نواز شریف کا آپریشن کامیاب ہوا ہے۔ سراج الحق

سیاست اور اختلافات اپنی جگہ پر لیکن بیماری انسانی مسئلہ ہے کسی کو بھی ہو سکتا ہے۔ سراج الحق

پاکستان میں بیس کروڑ عوام ہیں کیا ہی اچھا ہوتا کہ سب کا علاج ادھر ہی ہو سکتا امیر آدمی تو باہر جا سکتا ہے غریب نہیں جا سکتا۔ سراج الحق

مہاتیر محمد کو بھی تکلیف ہوئی تھی ڈاکٹرز نے کہا کہ باہر سے علاج کروایں تو انہوں نے کہا کہ اگر میں اپنے ڈاکٹرز اور ہسپتالوں پر اعتماد نہیں کروں گا تو لوگ بھی نہیں کریں گے۔ سراج الحق

عام لوگ بھی علاج کے لئیے باہر جاتے ہیں لیکن ملک کے اندر ایک تو ایسا ہسپتال ہو کہ جہاں حکمران علاج کے لئیے جایں۔ سراج الحق

امید ہے کہ نواز شریف اپنے دل کے آپریشن کے بعد پاکستان میں ایک کوالٹی کا ہسپتال بنا دیں کہ آئندہ کسی کو باہر جانے کی ضرورت پیش نہ آئے۔ سراج الحق

اچھا ہوتا کہ پاناما لیکس میں ہمارے مسلمان حکمرانوں کے نام نہ ہوتے لیکن ان کے نام بھی ہیں۔سراج الحق

امریکہ اور یورپی ممالک دوسروں کو تو ایمانداری کا سبق دیتے ہیں لیکن اپنے ملکوں میں کرپشن کا پیسہ رکھنے کی جگہ بھی بنا رکھی ہیں۔ سراج الحق

میں نہیں سمجھتا کہ حکومت کوئی ایسے اقدامات کرے گی کہ آئیندہ کرپشن کی روک تھا ہو سکے۔ سراج الحق

زیادہ تر لوگ اپنے کرپشن کے پیسے کو چھپانے کے لئیے آف شور کمپنیاں بناتے ہیں۔ سراج الحق

ایک نظام بن جانا چاہئیے کہ جو بھی کرپشن کرے سب کے لئیے ایک ونڈو ہو۔ سراج الحق

سراج الحق دوسروں پر تنقید کرتے ہیں لیکن خود کے پی کے میں احتساب کے محکمے کو تالا لگایا ہوا ہے۔ محمد زبیر

آج ٹی او آرز پر اس لئیے کوئی فیصلہ نہیں ہو سکا کیونکہ حکومتی نمائیندے وزیراعظم کے صحت کے لئیے دعا کرنے میں مصروف تھے۔ اعتزاز احسن

کسی کے بیمار پڑنے کی وجہ سے امور سلطنت رک نہیں جایا کرتے۔ اعتزاز احسن

حکومت کو چاہئیے تھا کہ اسحق ڈار کی بجائے کسی اور کو ٹی او آرز کی کمیٹی کا رکن بناتے وہ تو بجٹ کی وجہ سے بہت مصروف ہیں۔ اعتزاز احسن

میں نے کہا کہ ٹی او آرز پر کچھ تو پیشرفت کر لیں لیکن حکومتی ٹیم نے کہا کہ نہیں آج وزیراعظم کی سرجری ہے۔ اعتزاز احسن

اگر ٹی او آرز نہ بنے اور کوئی سمجھوتہ نہ ہوا تو حکومت کو بہت نقصان اٹھانا پڑے گا۔ اعتزاز احسن

پاناما پیپرز میں جن جن کا بھی نام آتا ہے ان سب کا اور ان کے خاندانوں کا احتساب ہونا چاہئیے۔ اعتزاز احسن

پاکستان میں امیر اور غریب میں یہی فرق ہے کہ امیر کا علاج بیرون ملک جبکہ غریب کا علاج ملک میں ہوتا ہے۔ عارف علوی

عبدالستار ایدھی بیمار ہیں لیکن کراچی کے ایک ہسپتال میں زیر علاج ہیں۔ عارف علوی

مسلم لیگ ن خود پر لگنے والے الزام کا جواب نہیں دیتی بلکہ دوسرے پر الزام لگانا شروع کر دیتی ہے۔ عارف علوی

ملک کا نظام وزیراعظم کی بیماری کیو جہ سے اس لئیے رک گیا ہے کیونکہ سارے فیصلے نوازشریف اور ان کے خاندان کے چند لوگ کرتے ہیں۔ عارف علوی

ٹی او آرز کی ڈیڈ لائین اگر ایک یا دو دن آگے ہو جائیے گی تو اس پر اتنی بحث نہیں ہونی چاہئیے تھی جتنی ہو رہی ہے۔ محمد زبیر

حکومت چھ مہینے پہلے ملک میں غریبوں کے مفت علاج کا پروگرام شروع کر چکی ہے وہ کسی بھی ہسپتال میں جا سکتے ہیں۔ محمد زبیر

31 May, 2016 11:26


Inline image 1https://www.youtube.com/watch?v=4cy5D1bAMSU
http://siasatkorner.com/threads/nadeem-malik-live-30th-may-2016.357727/
http://www.samaa.tv/videos/nadeemmalik/2016/05/nadeem-malik-live-30-may-2016/

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

30-MAY-2016

TOPIC- PM HEART SURGERY

GUESTS- HAMID KHAN, NADEEM AFZAL CHAN, TALAL CH, SALMAN AKRAM RAJA

HAMID KHAN OF PTI said that the participation of the PM in the meeting of the budget through video link is not against the constitution or any law. He said that if the PM is sick then it is a constitutional hitch that he should appoint some senior minister in his place. He said that when the PM can not work due to the medical reasons it is a disability and a constitutional problem.

He said that opposition has the same point of view on Panama Leaks and has not backed off from it. He said that right now there is a dead lock between the government and the opposition on TOR’s.

NADEEM AFZAL CHAN OF PPPP said that despite the illness of the PM our country is in the state of the war Pakistan does not have cordial relationship with any of its neighbors. He said that the he is seeing that the sixty percent power is slipping out of the hands of Nawaz Sharif. He said that foreign and financial policies are not in his control the country is being run on the loans. He said that the government is not visible in Iran Pakistan gas pipe line project, dams and power projects are on the halt. He said that the country ahs a parliamentary system but the PM never comes to the parliament.

He said that Shahbaz Sharif is the brother of Nawaz Sharif but he can not run the country he is the CM of a province. He said that the real danger is to Nawaz Sharif and not to the democracy the country is being run on Allah’s will. He said that if Nawaz Sharif withdraws Talal Ch is not going to become the PM of the country it will be someone from his own family.

He said that God forbid that Shahbaz Sharif or Hamza Sharif become the PM of Pakistan ever.

He said that minus one problem is being raised within the PML-N by the people have desire to become the PM of this country. He said that just roads and metro bus is not enough health, education and the security is also very important to run the country. He said that it is the desire of PML-N that General Raheel should get retired tomorrow but they should understand that next army chief will also be a general. He said that Pakistan do not have good relationship with Iran, Afghanistan and India and with Chine have become dubious because of the Cpek project. He said that the government is accused for Panama leaks Nandipur project and many other scandals of corruption.

TALAL CH OF PML-N said that the situation of the PM going for the treatment is not created first time in the past Benazir Bhutto went abroad for the delivery of Balawal Bhutto. He said that if someone has any objection of the PM working during his illness he should go to the SC. He said that whenever there is any problem the opposition parties demand that Nawaz Sharif should go home. He said that the opposition parties are working on minus one formula. He said that even PML-N itself can not go for minus one fo0rmula against Nawaz Sharif.

SALMAN AKRAM RAJA LAW EXPERT said that it is clearly stated in the constitution that if the PM can not work for some reason he can appoint some senior minister in his place. He questioned that when the PM goes to sleep he does not remain the PM of the country? He said that going of the PM for treatment is not a constitutional crisis.

30 May, 2016 22:14


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

30-MAY-2016

وزیراعظم کی وڈیو لنک کے زریعے بجٹ کے اجلاس میں شرکت کوئی ایسی چیز نہیں ہے کہ جس کی آئین یا قانون میں کوئی ممانعت ہو۔ حامد خان کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

جب وزیراعظم بیماری کی وجہ سے اپنا کام نہ کر سکے تو اس میں آئینی دشواری ہے کہ وہ اپنی جگہ کسی دوسرے سینئیر وزیر کو مقرر کرے۔ حامد خان

وزیراعظم کی بیماری کے علاوہ ہم حالت جنگ میں بھی ہیں اس وقت ہمارے کسی بھی پڑوسی ملک کے ساتھ تعتقات اچھے نہیں ہیں۔ ندیم افضل چن

مجھے نواز شریف کی حکومت ساٹھ فیصد ختم ہوتی دکھائی دے رہی ہے فارن پالیسی ان کے ہاتھ میں نہیں ہے فنانشل بھی نہیں ہے لون لے کر ملک چلا رہے ہیں۔ ندیم افضل چن

حکومت کسی پالیسی میں نہیں ہے ایران گیس پائپ لائن پاور پراجیکٹس ڈیمز رکے ہوئے ہیں۔ ندیم افضل چن

اس ملک میں پارلیمانی نظام ہے لیکن وزیراعظم پارلیمنٹ میں ہی نہیں آتے۔ ندیم افضل چن

پاکستان میں یہ صورت حال پہلی دفعہ پیدا نہیں ہوئی ماضی میں بینظیر بھٹو بھی بلاول کی پیدائش کے وقت ملک سے باہر گئی تھیں۔ طلال چوہدری

جب وزیراعظم میڈیکل وجوہات کی وجہ سے کام نہیں کر سکتا تو یہ ایک معزوری ہے اور آئینی مسئلہ ہے۔ حامد خان

اگر کسی کو وزیراعظم کے بیماری کے دوران کام کرنے پر کوئی اعتراض ہے تو وہ سپریم کورٹ جا سکتا ہے۔ طلال چودہری

کوئی بھی مسئلہ ہو جائے ہماری اپوزیشن جماعتیں نواز شریف کو ہٹانے کی بات کرنے لگتی ہیں مائنس ون کی باتیں ہو رہی ہیں۔ طلال چوہدری

شہباز شریف بھائی ضرور ہیں لیکن وہ ملک نہیں چلا سکتے وہ ایک صوبے کے وزیراعلی ہیں۔ ندیم افضل چن

پاکستان میں جمہوریت کو نہیں نواز شریف کو خطرہ ہے ملک اللہ کے سہارے چل رہا ہے۔ ندیم افضل چن

پارلیمنٹ میں یہ سوال پوچھا جا سکتا ہے کہ وزیراعظم کے بغیر ملک کیسے چلایا جا رہا ہے۔ حامد خان

میاں نواز شریف ہٹے تو طلال چوہدری نے وزیراعظم نہیں بن جانا ان کی اپنی فیملی میں سے ہی کوئی آئے گا۔ ندیم افضل چن

اللہ نہ کرے کہ اس ملک پر یہ وت آئے کہ نواز شریف کے بعد شہباز شریف یا حمزہ شہباز اس ملک کے وزیراعظم بنیں۔ ندیم افضل چن

پاناما لیکس پر اپوزیشن کا وہی موقف ہے وہ اس سے پیچھے نہیں ہٹی۔ حامد خان

اس وقت ملک میں ٹی او آرز کے مسئلے پر ڈیڈ لاک چل رہا ہے۔ حامد خان

آئین میں صاف لکھا ہے کہ اگر وزیراعظم کسی وجہ سے کام نہ کر سکے تو اپنی جگہ کسی دوسرے وزیر کو مقرر کر سکتا ہے۔ سلمان اکرم راجہ

کیا وزیراعظم جب سو جاتا ہے تو وہ وزیراعظم نہیں رہتا یہ کوئی آئینی بحران نہیں ہے۔ سلمان اکرم راجہ

مائنس ون کا مسئلہ خود مسلم لیگ ن کے اندر سے جو لوگ وزیراعظم بننا چاہتے ہیں اٹھا رہے ہیں۔ ندیم افضل چن

سڑکیں بنانا اور میٹرو چلانا ملک چلانا نہیں ہوتا صحت، تعلیم ملک کی سکیورٹی سب ملک چلانے میں آتے ہیں۔ ندیم افضل چن

مسلم لیگ ن خود بھی چاہے تو مائنس نواز شریف نہیں ہو سکتا۔ طلال چوہدری

مسلم لیگ ن کی خواہش ہے کہ جنرل راحیل کل ریٹائر ہو جایں لیکن ان کو پتہ ہونا چاہئیے کہ ان کی جگہ بھی کوئی دوسرا جرنیل ہی آئے گا۔ ندیم افضل چن

اس وقت پاکستان کے ایران، افغانستان اور بھارت سے تعلقات ٹھیک نہیں ہیں اور چین کے ساتھ سی پیک کی وجہ سے مشکوک ہو چکے ہیں۔ ندیم افضل چن

حکومت پر پاناما لیکس نندی پور اور کئی قسم کے کرپشن کے الزامات ہیں۔ ندیم افضل چن

27 May, 2016 11:02


Inline image 1https://www.youtube.com/watch?v=KejPxPLaFpo
http://www.samaa.tv/videos/nadeemmalik/2016/05/nadeem-malik-live-26-may-2016/

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

26-MAY-2016

TOPIC- PAKISTAN AND REGIONAL SITUATION

GUESTS- SAEED GHANI, SAFDAR ABBASI, RANA SANA ULLAH, ASAD UMER

SAEED GHANI OF PPPP said that nothing has been decided on Panama Leaks between the government and opposition but things are moving forward. He said that the letter that SC has written in the response to the TOR’s of the government its suggestions have to be included. He said that the government and the opposition have moved forward but he does not believe that there will be an easy consensus.

He said that PPPP or PTI anybody whom name is included in the Panama Papers action should be taken against him. He said that the TOR’s do not say that punish Nawaz Sharif but spare others.

He said that the way politicians are accused for corruption others are not accused so easily.

SAFDAR ABBASI OF PPP-W said that there is no consensus in the opposition on TOR’s and Imran Khan is not happy that opposition has withdrawn from the demand of the resignation of the PM. He said that he does not believe that formation of the commission after the TOR’s are decided will make any significant difference. He said that Zardari is asking to Balawal to demand the resignation of Nawaz Sharif and he himself is having talks with the PM. He said that Nawaz Sharif has been strangled he should resign.

He said that in his opinion BCCI helped Mian Sahib to set his factory in Dubai.

He said that the name of the politicians have been defamed enough they have to take forward the process of the accountability.

RANA SANA ULLAH OF PML-N said that it is welcomed gesture that the SC has asked to constitute a new law all the commissions have been set under the law of 1956 so far. He said that there will be no legal consequences of Panama Papers inquiry no matter how far the investigations go. He said that eversince Imran Khan’s own company has been disclosed in Panama Papers there is no moral or legal consequences can be achieved.

He said that the reputation of a businessman is his real asset and bank gives him loan on it. He said that when the father of Nawaz Sharif set six factories in eighteen months he was not in the politics.

He said that if the process of the accountability has to be started then accountability institution has to pay heed and constitute a new law. He said that the opposition wants that Panama Papers issue should not be resolved up to 2018 so that they could manipulate it in the next elections. He said that PTI is against the democracy, development and system in Pakistan.

ASAD UMER OF PTI said that same TOR’s will apply on him as on Nawaz Sharif. He said that Imran Khan brought his money to Pakistan from overseas there is no tax that he has not paid. He said that it is the right of the nation to know the truth and it is Imran Khan or Nawaz Sharif whoever is guilty should be punished. He said that Rana Sana Ullah is wrong to say that bank gives loan on the reputation of the businessman. He said that bank always gives loan on guarantee or pledging of the property.

He said that Nawaz Sharif has accused his father for money laundering by saying that he set a factory in Dubai in 1980. He said that in the 80’s there was no law to take the money abroad without the permission of the government.

He said that according to the law it will be asked to Nawaz Sharif that how he bought the property of billion of rupees in another country.

27 May, 2016 09:07


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

26-MAY-2016

پاناما پیپرز پر حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ابھی کچھ طے نہیں ہوا لیکن چیزیں آگے کی طرف بڑھ رہی ہیں۔ سعید غنی کی ندیم ملک لایو میں گفتگو

حکومت کے ٹی او آرز کے جواب میں سپریم کورٹ نے جو خط لکھا ہے اس کی تجاویز حکومت کو شامل کرنا پڑیں گی۔ سعید غنی

حکومت اور اپوزیشن کچھ نقاط پر آگے ضرور بڑھے ہیں لیکن میں نہیں سمجھتا کہ آسانی سے کوئی اتفاق رائے ہو جائے گا۔ سعید غنی

اپوزیشن میں ٹی او آرز پر اتفاق رائے نہیں ہے عمران خان اپوزیشن کے نواز شریف کے استعفے کے مطالبے سے پیچھے ہٹنے پر خوش نہیں ہیں۔ صفدر عباسی

ٹی او آرز کے بعد کمشن بننے سے میرا نہیں خیال کہ کوئی بہت بڑا فرق پڑے گا۔ صفدر عباسی

زرداری صاحب بلاول سے کہلوا رہے ہیں کہ نواز شریف استعفی دے اور خود ان سے بات چیت کر رہے ہیں۔ صفدر عباسی

یہ بات بڑی خوش آئیند ہے کہ سپریم کورٹ نے کمشن بنانے کے لئیے ایک نیا قانون بنانے کا کہا ہے اب تک تمام کمشن انیس سو چھپن کے آئین کے تحت ہی بنے ہیں۔ رانا ثنا اللہ

پاناما پیپرز کا اشو جہاں تک مرضی چلا جائے اس کا کوئی قانونی نتیجہ نہیں نکلے گا کمشن چاہے جتنی بھی انکوائری کر لے۔ رانا ثنا اللہ

جب سے عمران خان کی اپنی آف شور کمپنی سامنے آئی ہے اب ان میں پاناما پیپرز کے معاملے کا کوئی سیاسی یا اخلاقی اثر باقی نہیں رہا۔ رانا ثنا اللہ

عمران خان نے کہا ہے کہ جو ٹی او آرز نواز شریف پر لگیں ان پر بھی وہی لگائے جایں۔ اسد عمر

عمران خان اپنا پیسہ باہر سے ملک میں لے کر آئے کونسا ایسا ٹیکس ہے جو انہوں نے ادا نہیں کیا۔ اسد عمر

قوم کو حق پہنچتا ہے کہ اسے سچ بتایا جائے اگر عمران خان غلط ہے تو اسے سزا ملے اور اگر نواز شریف غلط ہے تو اسے سزا ملے۔ اسد عمر

پیپلز پارٹی یا پی ٹی آئی جس جس کا بھی آف شور کمپنیوں میں نام آتا ہے اس کے خلاف کاروائی کی جائے۔ سعید غنی

کیا ٹی او آرز میں یہ لکھا ہے کہ نوا شریف کو تو سزا ملے لیکن اپوزیشن کو نہ ملے۔ سعید غنی

میاں صاحب پھنس چکے ہیں انہیں استعفی دینا چاہئیے۔ صفدر عباسی

کاروباری آدمی کی ساکھ ہی سب کچھ ہوتی ہے بینک اسے اس کی ساکھ پر بھی قرضہ دے دیتا ہے۔ رانا ثنا اللہ

نواز شریف کے والد نے جب اٹھارہ ماہ میں چھ فیکٹریاں لگائی تھیں تو اس وقت وہ سیاست میں نہیں تھے۔ رانا ثنا اللہ

رانا ثنا اللہ کا یہ کہنا غلط ہے کہ بنک صرف کاروباری ساکھ پر بھی قرضہ دے دیتا ہے بینک ہمیشہ بغیر کسی گارنٹی یا جائیداد کے قرضہ نہیں دیتا۔ اسد عمر

میاں صاحب نے یہ کہہ کر کہ ان کے والد نے انیس سو اسی میں دبئی میں فیکٹری لگائی تھی اپنے والد پر منی لانڈرنگ کا الزام لگایا ہے۔ اسد عمر

میرے خیال میں بی سی سی آئی نے میاں صاحب کی دبئی میں فیکٹری لگانے میں مدد کی تھی۔ صفدر عباسی

احتساب کرنا ہے تو پھر احتساب کے ادارے کو سر جوڑ کر بیٹھنا ہو گا اور قانون میں بھی تبدیلی کرنی پڑے گی۔رانا ثنا اللہ

اپوزیشن چاہتی ہے کہ دو ہزار اٹھارہ کے الیکشن تک پاناما پیپرز کا معاملہ حل نہ ہو تا کہ وہ اسے الیکشن میں استعمال کر سکیں۔ رانا ثنا اللہ

قانون کے مطابق نواز شریف سے پوچھا جائے گا کہ آپ نے لندن میں اربوں روپے کے فلیٹس کس طرح خریدے۔ اسد عمر

سیاست دان احتساب نہیں کریں گے تو پھر لوگ دوسری طرف دیکھیں گے۔ اسد عمر

سیاست دانوں کا نام کافی خراب ہو چکا ہے انہیں احتساب کا عمل آگے چلانا پڑے گا۔ صفدر عباسی

پی ٹی آئی پاکستان میں جمہوریت، ترقی اور نظام کے خلاف ہے۔ رانا ثنا اللہ

پی ٹی آئی فوجی مداخلت کے خلاف ہے لوگ موجودہ نظام کو جمہوری نہیں مانتے۔ اسد عمر

جس طرح سیاست دانوں پر کرپشن کا الزام لگا دیا جاتا ہے کسی اور پر نہیں لگایا جاتا۔ سعید غنی

26 May, 2016 11:58


Inline image 1https://www.youtube.com/watch?v=VoFH65W9uH8
http://www.samaa.tv/videos/nadeemmalik/2016/05/nadeem-malik-live-25-may-2016/

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

25-MAY-2016

TOPIC- PAKISTAN POLITICS

GUESTS- TAHIR UL QADRI, SHAH MAHMOOD QURESHI

TAHIR UL QADRI said that the American drone attack on Pakistan is worrisome and he will like to see the reaction of the government on it. He said that the government has no foreign minister involved in corruption and an individual is ruling on the country. He said that Pakistan has neither a foreign minister nor a foreign policy. He said that American attack is the failure of all institutions but the government is mainly responsible because they say that they are elected people.

He said that all the neighbors have become enemies of Pakistan the government has no think tank. He said that Pakistan is not a state because the state is not the name of the bricks and walls. He said that the first institution of the state is the parliament but thieves and loan defaulters are sitting in our parliament. He said that the second institution in a state is the executive that include PM to police of the country. He said that Pakistani police kills people and gives shelter to the terrorists. He said that there is no possibility of a regime more corrupt than the current rulers but if it happens people will vote for them because they have no perspective. He said that people in Pakistan vote in the name of jobs and the drainage system in their streets. He said that motorcycles and money is given as bribe to get the votes of the people in Pakistan.

He said that the committee of TOR’s is actually a tearing committee on Panama papers. He said that the real TOR’s committee is PM, Asif Ali Zardari and Molana Fazal U Rehman that is setting TOR’s in London. He said that when the London committee on TOR’s will finish its work then the members of the TOR committee will accept them and one or two will keep protesting. He said that he had debate with most of the opposition parties’ top leadership and they do not accept that they are corrupt. He said that our opposition believes in a different definition of corruption. He said that the government wants buy two or three months using TOR’s committee to drag things.

He said that Pakistan is under debt of twenty trillion rupees. He said that Pakistan will owe another five trillion rupees because of the Cpek project and is printing five billion rupees currency notes everyday. He said that after the budget of this year the total debt of Pakistan will be thirty trillion rupees that is equal to our GDP. He said that when the debt is equal to the GDP the economy of a country collapses.

He said that he hopes that he will be in Pakistan on 17th of June and will take revenge of the martyrdoms of ModelTown tragedy. He said that the FIR of Model Town tragedy was registered on in the interference of Raheel Sharif otherwise nobody was ready to register it. He said that he is expecting that the army s institution will help him to get justice in Model Town Tragedy.

SHAH MAHMOOD QURESHI OF PTI said that today the committee on TOR’s has decided that how it is going to work it will have a head or not and is decided that nobody will be the head of this committee. He said that the SC has rejected the TOR’s of the government and opposition TOR’s are more close to the thinking of the SC. He said that the opposition has handed over its TOR’s to the government and has said to inform if they have any objection on it. He said that he believes that within fifteen days the matter of TOR’s will be resolved.

26 May, 2016 09:48


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

25-MAY-2016

پاکستان پر امریکی ڈرون حملہ یقیناْ انتہائی تشویش کا باعث ہے اور میں پاکستانی حکومت کا رد عمل دیکھنا چاہتا ہوں۔ طاہر القادری کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

جس حکومت کا کام صرف کرپشن اور زاتی حکمرانی ہو اور جس کو کائی وزیرخارجہ نہ ہو تو اس کی سنجیدگی کا اندازہ کیا جا سکتا ہے۔

پاکستان کا نہ کوئی وزیرخارجہ ہے اور نہ کوئی خارجہ پالیسی ہے۔

امریکی حملہ تمام اداروں کی ناکامی ہے لیکن بنیادی زمہ داری حکومت کی ہے جو کہتی ہے کہ وہ منتخب ہو کر آئی ہے۔

حکمرانوں کا کوئی تھنک ٹینک نہیں ہے پاکستان کے تمام ہمسائے ہمارے دشمن بن چکے ہیں۔

پاکستان میں سٹیٹ نام کی کوئی چیز نہیں ہے سٹیٹ اینٹوں اور دیواروں کا نام نہیں ہوتا۔

سٹیٹ کا پہلا ادراہ پارلیمنٹ ہوتی ہے لیکن ہماری پارلیمنٹ میں چور اور قرضہ خور بیٹھے ہیں۔

سٹیٹ میں دوسرا شعبہ ایگزیکٹو ہوتی ہے جس میں وزیراعظم سے لے کر پولیس تک سب آتے ہیں۔

پاکستان میں پولیس لوگوں کو سر عام قتل کرتی ہے دہشت گتردوں کو پناہ دیتی ہے۔

موجودہ حکمرانوں سے بڑے ڈاکو آنے کا امکان نہیں ہے لیکن اگر آ جایں تو عوام انہیں بھی منتخب کر لیں گے کیونکہ انہیں شعور نہیں دیا گیا۔

پاکستان میں لوگ ووٹ نوکریوں کے نام پر اور اس بات پر دیتے ہیں کہ ان کی نالیاں کس نے بنائی ہیں۔

پاکستان میں الیکشن کے دوران موٹر سائیکیں دی جاتی ہیں رشوت دی جاتی ہے اسی لئیے الیکشن کا خرچہ کروڑوں میں پہنچ گیا ہے۔

پاناما پیپرز کی ٹی او آرز بنانے والی کمیٹی پاناما پیپرز کو ٹیر کرنے والی کمیٹی ہے۔

اصل ٹی او آرز لندن میں تیار ہو رہے ہیں اور اس کمیٹی میں وزیراعظم، زرداری اور مولانا فضل الرحمان شامل ہیں۔

لندن میں ٹی او آرز طے ہو جایں گے تو پھر ٹی او آرز بنانے والی کمیٹی کے نو دس ارکان ایک طرف ہو جایں گے اور ایک دو لوگ شور مچانے کے لئیے رہ جایں گے۔

جو ایک دو لوگ شور مچانے والے رہ جایں گے وہ بعد میں کہیں گے کہ قادری صاحب ٹھیک کہتے تھے۔

میری اپوزیشن کی چار پانچ جماعتوں کی ٹاپ] لیڈرشپ کے ساتھ ڈبیٹ ہو چکی ہے وہ کرپشن کو کرپشن مانتے ہیں نہیں ہیں۔

حکومت ٹی او آرز کی کمیٹی کے استعمال کر کے دو تین مہینے کا وقت گزارنا چاہتی ہے۔

پاکستان اس وقت بیس ہزار ارب روپے کا مقروض ہو چکا ہے۔

پانچ ہزار ارب روپے کا پاکستان سی پیک کے وجہ سے مقروض ہو جائے گا اور سوا پانچ ارب روپے روزانہ چھاپے جا رہے ہیں۔

اس بجٹ کے بعد پاکستان کا قرضہ تیس ہزار ارب روپے ہو جائے گا جو جی ڈی پی کے برابر ہو جائے گا جب قرضہ اور جی ڈی پی برابر ہو جایں تو اکانومی کولیپس کر جاتی ہے۔

میں امید کرتا ہوں کہ سترہ جون کو پاکستان میں ہوں گا ہم نے سترہ جو ن کے شہدا کے خون کا بدلہ لینا ہے۔

سانحہ ماڈل کے سانحہ کی ایف آئی آر جنرل راحیل شریف نے درج کروائی تھی ورنہ کوئی نہیں کاٹ رہا تھا۔۔

ہم چاہتے ہیں کہ فوج سٹیٹ کا مقتدر ادارہ ہونے کی حیثیت سے سانحہ ماڈل ٹاؤں میں انصاف دلائے۔
میری عمران خان سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی اور ہمارا اس دفعہ دھرنا دینے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔

آج ٹی او آرز کی کمیٹی نے طے کیا کہ اس نے کام کیسے کرنا ہے اس کوئی سربراہ ہو گا یا نہیں تو طے ہوا کہ نہیں ہو گا۔شاہ محمود قریشی

حکومتی ٹی او آرز کو سپریم کورٹ نے مسترد کر دیا ہے ہمارے ٹی او آرز سپریم کورٹ کی سوچ کے زیادہ قریب ہیں۔ شاہ محمود قریشی

ہم نے حکومت کو اپنے ٹی او آرز دئیے ہیں اور کہا ہے کہ جہاں جہان اعتراض ہے بتا دیجئیے یا ہم آپ کو قاعل کریں گے یا خود قاعل ہو جایں گے۔ شاہ محمود قریشی

ہم سمجھتے ہیں کہ پندرہ دنوں میں ٹی او آرز کا معاملہ طے ہو جانا چاہئیے۔ شاہ محمود قریشی