12 February, 2016 15:21


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

11-FEBRUARY-2016

TOPIC- TERRORISM

GUESTS- GENERAL AJAZ AWAN, TALAL CH, ALI MOHAMMAD KHAN, MOLA BAKSH CHANDEO

GENERAL (R) AJAZ AWAN said that our leadership has to decide that what their priorities are. He said that if the priority of the leadership is to eradicate the extremism it is quite possible. He said that the war against terrorism is a solo flight of the military and is not getting any help from judiciary like other operations and the leadership is in confusion. He said that instead of fixing the situation of law and order and training the police the government is spending huge money on mega projects. He said that when he says that the leadership did not fulfill its responsibility it includes both civil and the military leadership. He said that the politicians are not the nose of wax that military can manipulate them. He said that the children of poor go to Madrassa because they get free education, clothing and shelter there. He said that the government needs to provide the alternate of the facilities children get in the Madrassa. He said that the government needs to provide the facilities of institutions to learn the skills. He said that the government should make sure that the children should go home after the learning instead of the remaining at the disposal of the Molvi whole day.

TALAL CH OF PML-N said that first the world used Muslims against Russia and the wrong policies of the state were also included in it. He said that we need to remove poverty besides the other reason of terrorism. He said that seventeen percent of the budget is being spent on education, health and roads and rest goes to debt services and the defense of the country. He said that to up lift the poverty we need to set new industrial units. He said that the budget allocated for education is not being spent any place else twenty four to twenty five percent of the budget is being spent on the education.

He said that there should be no doubt that Nawaz Sharif is leading the war against the terrorism.

ALI MOHAMMAD KHAN OF PTI said that the main problem of the country is law and order the mothers are afraid to send their children to school that he may not come back. He said that he will like to appeal to all political parties that they should not do any politics on Zarb-e-Azb and terrorism. He said that we often blame Madrssas for terrorism but so many of worst terrorists do not belong to any Madrassa. He said that we need to watch that why youngsters from LUMS and other prominent institutions are diverting towards the terrorism.

He said that Pervez Khattak and Shahbaz Sharif talked about the negotiations with the terrorists when the parliament was also in the favor of it. He said that Naseer Ullah Babar patronized Taliban during the government of Benazir Bhutto and he said that these are our boys. He said that instead of living in the past we should move forward now. He said that the opposition should get tougher and persuade Nawaz Sharif to act upon the all twenty points of national action plan.

MOLA BAKSH CHANDEO OF PPPP said that General Ajaz Awan is accusing political leadership that they did not fulfill their duties. He said that General Ajaz Awan should not forget that the menace of terrorism was introduced in Pakistan by General Zia Ul Haq. He said that some religious parties are still sporting terrorists openly. He said that one religious party stated that the military personals losing their lives fighting against the terrorists are not martyrs but Taliban are. He said that PTI said to open the office of Taliban in Pakistan and PML-N had the idea of good and bad Taliban.

He said that he will say it with full conviction that all the credit of war against the terrorism goes to the military.

He said that today the good results against terrorism are produced because the civil leadership is backing the forces whereas military could not produce such results of its own.

12 February, 2016 11:55


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

11-FEBRUARY-2016

ہماری لیڈر شپ کو فیصلہ کرنا ہے کہ ان کی ترجیحات کیا ہیں۔ جنرل اعجاز اعوان کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

اگر لیڈر شپ کی ترجیح ہو کہ دہشت گردی کو ملک سے ختم کرنا ہے تو یہ کیا جا سکتا ہے۔ جنرل اعجاز اعوان

دہشت گردی کے خلاف جنگ فوج کی سولو فلائٹ ہے اس میں اسے جیوڈیشری سے دیگر آپریشنز کی طرح مدد نہیں ملی اور سول لیڈر شپ میں کنفیوژن ہے۔ جنرل اعجاز اعوان

سول لیڈر شپ بجائے پولیس کو اور امن امن کو ٹھیک کرنے کے بڑے بڑے شو پیس پراجیکٹس پر پیسہ لگا رہی ہے۔ جنرل اعجاز اعوان

پہلے دنیا نے مسلمانوں کو روس کے خلاف استعمال کیا اس میں سٹیٹ کی غلط پالیسیاں شامل تھیں۔ طلال چوہدری

ہمیں دہشت گردی کے خلاف دیگر وجوہات ختم کرنے کے علاوہ غربت کو بھی ختم کرنا ہو گا۔طلال چوہدری

بجٹ کے سترہ فیصد میں سڑکیں تعلیم، صحت اور دیگر منصوبے آ جاتے ہیں باقی قرضہ ادا کرنے اور ڈیفنس پر خرچ ہو جاتا ہے۔ طلال چوہدری

غربت ختم کرنے کے لئیے ملک میں صنعتی منصوبے لگانے ہوں گے۔طلال چوہدری

تعلیم کا پیسہ نکال کر کہیں اور نہیں لگایا جا رہا پنجاب میں بجٹ کا چوبیس پچیس فیصد تعلیم پر خرچ ہو رہا ہے۔ طلال چوہدری

پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ امن امان ہے مایں بچوں کو سکول بھیجتے ہوئے ڈرتی ہیں کہ اس کا بچہ واپس آئے گا یا نہیں۔علی محمد خان

میں تمام سیاسی جماعتوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ نیشنل ایکشن پلان اور دہشت گردی کے مسئلے پر سیاست نہ کریں۔ علی محمد خان

ہم دکہتے ہیں کہ مدرسوں سے دہشت گرد نکل رہے ہیں جبکہ بہت سے بڑے بڑے دہشت گردوں کا مدرسے سے کوئی تعلق نہیں ہے۔علی محمد خان

دیکھنا ہو گا کہ لمز اور دوسرے اعلی تعلیمی اداروں سے نوجوان دہشت گرد کیوں پیدا ہو رہے ہیں۔علی محمد خان

جنرل صاحب کہہ رہے ہیں کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سیاسی لیڈر شپ نے اپنی زمہ داری پوری نہیں کی ہے۔ مولا بخش چانڈیو

جنرل صاحب کو یہ نہیں بھولنا چاہئیے کہ پاکستان میں دہشت گردی کی مصیبت جنرل ضیاالحق کے دور میں آئی۔مولا بخش چانڈیو

پاکستان کی کچھ مزہبی جماعتیں آج بھی دہشت گردوں کی کھلم کھلا حمایت کر رہی ہیں۔ مولا بخش چانڈیو

ایک سیاسی جماعت نے کہا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف لڑتے ہوئے مرنے والے فوجی شہید نہیں ہیں لیکن طالبان شہید ہیں۔ مولا بخش چانڈیو

پی ٹی آئی نے طالبان کا دفتر کھولنے اور مسلم لیگ ن نے اچھے اور برے طالبان کی بات کی تھی۔ مولا بخش چانڈیو

جب میں کہتا ہوں کہ لیڈرشپ نے دہشت گردی کے خلاف اپنی زمہ داری پوری نہیں کی تو اس میں سیاسی اور فوجی دونوں لیڈرشپ شامل ہیں۔ جنرل اعجاز اعوان

سیاست دان کوئی موم کی ناک نہیں ہیں کہ فوجی انہیں جدھر چاہے موڑ لیتے ہیں۔ جنرل اعجاز اعوان

اس بات میں کسی کو شک نہیں ہونا چاہئیے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کو نواز شریف لیڈ کر رہے ہیں۔ طلال چوہدری

پرویز خٹک اور شہباز شریف نے طالبان سے مزاکرات کی بات اس وقت کی تھی جب پارلیمنٹ بھی اس کے حق میں تھی۔ علی محمد خان

بینظیر بھٹو شہید کی حکومت میں نصیر اللہ بابر نے طالبان بنائے تھے اور کہا تھا کہ دیز آر آور بوائز۔ علی محمد خان

اب ہمیں ماضی کو کریدنے کی بجائے آگے بڑھنا چاہئیے۔ علی محمد خان

میں یہ بات علی الاعلان کہتا ہوں کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کا سارہ سہرہ صرف پاک فوج کو جاتا ہے۔ مولا بخش چانڈیو

غریب کے بچے اس لئیے مدرسے میں جاتے ہیں کہ انہیں وہاں مفت تعلیم کھانا اور رہائش ملتی ہے حکومت کو اس کا متبادل ففراہم کرنے کی ضرورت ہے۔جنرل اعجاز اعوان

حکومت کو بچوں کے لئیے ہنر مندی سکھانے والے اداروں کا بندوبست کرنے کی ضرورت ہے۔ جنرل اعجاز اعوان

حکومت اس بات کو یقینی بنائے کہ بچے سارا دن مولوی کے سپرد نہ رہیں بلکہ وہ پڑھ کر رات کو گھر واپس آیں۔ جنرل اعجاز اعوان

اپوزیشن کا کام ہے کہ وہ ڈنڈا لے کر نواز شریف کے پیچھے پڑ جائے اور ان سے نیشنل ایکشن پلان کی بیس نقاط پرعمل کروائے۔ علی محمد خان

آج دہشت گردی کے خلاف اچھے نتائج اس لئیے نکلے ہیں کیونکہ سیاسی قیادت فوج کے ساتھ ہے اکیلی فوج تھی تو ایسے نتائج نہیں حاصل ہو سکے تھے۔ مولا بخش چانڈیو

11 February, 2016 08:15


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

10-FEBRUARY-2016

TOPIC- KPK NAB COMMISSION

GUESTS- SHOKAT YOUSUFZAI, HAMID KHAN, DR MUSSADIQ, SHAZIA MARI

SHOKAT YOUSUFZAI OF PTI said that KPK NAB used to arrest any accused person now the amendment has been made to provide some evidence before the arrest. He said that only one person had all the authority in KPK NAB but now this onus is put on the whole institution. He said that if the investigations against any minister of PTI in NAB are underway they will continue.

He said that Mr. Barki is a very competent man nobody should have any doubt in his ability he has come from America with motive to serve only.

HAMID KHAN FORMER HEAD OF NAB KPK said that he is not the man that will take dictation from anybody and he did not take any dictation while registering the cases of corruption in KPK. He said that he was not the only one to take decisions in NAB KPK but all the members used to decide collectively. He said that he could not find any evidence of involvement of Pervez Khattak in the corruption but the direction of investigations go towards the top leadership of PTI. He said that PTI never created any hurdle in his responsibilities working as the head of NAB in KPK. He said that sixty percent of the cost of any project goes into corruption in KPK. He said that NAB used to get the remand of forty five days against any accused which has been reduced to fifteen days now. He said that more than eight ministers of PTI government in KPK are under investigations for corruption in the NAB commission.

He said that a strong institution, its powerful head and the good intention of the government is required for transparent accountability.

DR MUSADIQ OF PML-N said that the policy of PTI is that if they do some thing it is all right but if someone else does it is wrong. He said that PTI accuses PML-N for kinship but has appointed their cousin for the reforms in hospitals in KPK.

SHAZIA MARI OF PPPP said that the military rulers tried to make corruption cases against the politicians too. She said that military rulers dug deep to against ZA Bhutto but found nothing against him. She said that some thing that was supposed to be criticized against PPPP is not for PTI at this moment. She said that PML-N and PTI are against each other but on some issues their thinking is alike.

She said that PML-N has appointed its relatives in the institutions and if the relatives were not available to be appointed those institutions are still vacant.

10 February, 2016 21:12


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

10-FEBRUARY-2016

کے پی کے میں پہلے احتساب کمشن کسی کو بھی اٹھا سکتا تھا اب ترمیم کی گئی ہے کہ پہلے کچھ ثبوت فراہم کرنے چاہئییں۔ شوکت یوسفزئی کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

پہلے کے پی کے کے احتسات کمشن کا تمام اختیار صرف ایک شخص کے پاس تھا لیکن اب یہ پورے ادارے کو دے دیا گیا ہے۔ شوکت یوسفزئی

میں کسی شخص سے ڈکٹیشن لینے والا بندہ نہیں ہوں میں نے جو کیسز بنائے ان میں کسی سے ڈکٹیشن نہیں لی۔ حامد خان

احتساب کمشن میں میں اکیلا فیصلے نہیں کرتا تھا بلکہ سب ارکان مل کر کرتے تھے۔ حامد خان

مجھے پرویز خٹک کے خلاف کرپشن کے کوئی ثبوت نہیں ملے لیکن تحقیقات کا رخ پی ٹی آئی کی اعلی قیادت کی طرف جاتا ہے۔ حامد خان

میرے کام میں پی ٹی آئی کی طرف سے کبھی کسی نے کوئی رکاوٹ نہیں ڈالی۔ حامد خان

پی ٹی آئی کی پالیسی یہ ہے کہ اگر وہ کچھ کریں تو ٹھیک لیکن کوئی اور کرے تو غلط ہوتا ہے۔ ڈاکٹر مصدق ملک

فوجی حکمرانوں نے بھی سیاست دانوں کے خلاف کرپشن کے مقدمات بنانے کی کوشش کی بھٹو کی خلاف بھی بہت کچھ کھودا گیا لیکن ملا کچھ نہیں تھا۔ شازیہ مری

جو چیز پیپلز پارٹی کے متعلق قابل تنقید تھی وہ اب پی ٹی آئی کے لئیے قابل تنقید نہیں رہی۔شازیہ مری

مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی ایک دوسرے کے خلاف ہیں لیکن بہت سے معاملات میں ان کی سوچ ایک جیسی ہے۔ شازیہ مری

اگر کے پی کے کا احتساب کمشن پی ٹی آئی کے وزرا کے خلاف کوئی تحقیقات کر رہا ہے تو وہ جاری رہییں گی۔شوکت یوسفزئی

کے پی کے میں کسی بھی منصوبے کا ساٹھ فیصد تک کرپشن کی نظر ہو رہا ہے۔ حامد خان

پہلئ جب کسی کو کرپشن کے الزام میں گرفتار کیا جاتا تھا تو پینتالیس دنوں کو ریمانڈ ملتا تھا لیکن اب وہ پندرہ دنوں کا کر دیا گیا ہے۔ حامد خان

کے پی کے احتساب کمشن میں اس وقت پی ٹی آئی کے آٹھ سے زیادہ وزرا کے خلاف کرپشن کی تحقیقات ہو رہی ہیں۔ حامد خان

پی ٹی آئی مسلم لیگ ن پر کنبہ پروری کا الزام لگاتی ہے جبکہ خود کے پی کے میں ہسپتالوں کو ٹھیک کرنے کے لئیے اپنے خالہ زاد برکی صاحب کو لے کر آئی ہے۔ ڈاکٹر مصدق

برکی صاحب بہت قابل آدمی ہیں ان کی قابلیت میں کسی کو شک نہیں ہے وہ خدمت کے جزبے سے امریکہ سے آئے ہیں۔شوکت یوسفزئی

مسلم لیگ ن نے بھی اپنے رشتہ داروں کو اداروں کا سربراہ لگایا ہے اور جہاں رشتہ دار نہیں ملا وہ ادارے ابھی تک خالی پڑے ہیں۔ شازیہ مری

احتساب کرنے کے لئیے ایک مظبوط ادارہ اس کا ایک مظبوط سربراہ اور حکومت کی نیک نیتی ہونا بہت ضروری ہے۔ حامد خان

9 February, 2016 14:48


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

08-FEBRUARY-2016

مجھے معلوم نہیں ہے کہ مجھے کس نے اٹھایا تھا لیکن جو کچھ بھی ہوا گورنمنٹ کے زریعے ہی ہوا ۔ہدایت اللہ کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

مجھے صبح سہراب گوٹھ کے قریب چھوڑ کر چلے گئے اور کچھ نہیں بتایا کہ کیوں چھوڑ رہے ہیں۔ ہدایت اللہ

پی آئی اے کی نجکاری پرائیویٹائزیشن کمشن کے قانون کے تحت ہو گی لیکن میڈیا اس کا زکر نہیں کر رہا۔ خرم دستگیر

پی آئی اے کس کو بیچی جائے گی ابھی ہم اس مرحلے تک پہنچے ہی نہیں کہ قیاس آرائیاں شروع ہو گئی ہیں۔ خرم دستگیر

پی آئی اے کی نجکاری سے پہلے ایک پورا فنائشل ایڈوائزر ہونا ہے اور پرائیویٹ کمشن کو اپنی ریکمنڈیشن دینی ہے۔خرم دستگیر

پی آئی اے کو بیچنے کا پراسس آگے جائے گا،خرم دستگیر

فروری دو ہزار تیرہ میں حکومت نے آئی ایم ایف کے ساتھ طے کر لیا تھا کہ پی آئی اے کی نجکاری کے لئیے کیا کرنا ہے۔ سعید غنی

انیس سو چھپن کے قانون کے تحت حکومت پی آئی اے کی نجکاری نہیں کر سکتی تھی اس لئیے نیا قانون لایا گیا ہے۔سعید غنی

اگر حکومت پی آئی اے کی بہتری کرنا چاہتی ہے تو پارلیمنٹ کا کوئی ممبر بھی ایسا نہیں جو بہتری نہ چاہے۔ سعید غنی

حکومت نے سات دسمبر کو پارلیمنٹ کا اجلاس بلایا پانچ اور چھ دسمبر کی چھٹی تھی چار دسمبر کو آرڈیننس کے تحت قانون نافزکر دیا۔ سعید غنی

اکیس جنوری کو ممبران اسمبلی کسی مسئلے پر بائیکاٹ پر تھے تو حکومت نے پی آئی اے کا نیا قانون اسمبلی میں پیش کر دیا۔ سعید غنی

اگر پی آئی اے کو بیچنا بہتری کی بات ہے تو پھر حکومت پارلیمنٹ کو اعتماد میں کیوں نہیں لیتی حکومت کو اتنی جلدی کیوں ہے۔ سعید غنی

ہمارے بیس مینیجرز اور دوسری انتظامیہ ہمیں دھمکیاں دیتی رہی کہ فلائٹ کریں ورنہ نوکری سے نکال دیں گے۔ صفوت سلیم

ہمیں کالز کر کے اور ایس ایم کر کے بھی دھمکیاں دی گئیں کہ پولیس کا چھاپہ مروا دیں گے آپ کے ساتھ بہت برا ہو گا۔ صفوت سلیم

ہمارے ایک ساتھی کے گھر پولیس کا چھاپہ مروایا گیا اس کے والد دل کے مریض ہیں۔ صفوت سلیم

ہمیں بھی اطلاعات ملی ہیں کہ پی آئی اے ملازمین کو دھمکیاں دی گئیں۔ علی رضا زیدی

پنڈی میں پولیس نے میرے گھر پر چھاپہ مارا مجھے اغٖوا کرنے کے تمام اشارے وفاقی حکومت کی طرف جاتے ہیں۔ ہدایت اللہ

پی آئی اے والے اپنی مشکلات کا بتا رہے ہیں یہ ان لوگوں کو بھی سوچیں جو ساری رات جدہ ائیر پورٹ پر بیٹھے رہے۔خرم دستگیر

پی آئی اے کی پروازوں کو انجینئیرنگ والوں کی کلئیرنس کے بغیر اڑایا گیا وزیراعظم کو خود مداخلت کرنی پڑی۔علی رضا زیدی

حکومت پی آئی اے کے ہڑتالی ملازمین کو دھمکیاں دے رہی ہے دانشمندی یہ ہے کہ مزاکرات کرے۔ سعید غنی

میں زاتی طور پر جانتا ہوں کہ حکومت پی آئی اے ملازمین کو دھمکیاں دیتی رہی۔ سعید غنی

میں وعدہ کرتا ہوں کہ آئندہ۰ پی آئی اے کے ملازمیں کو دھمکیاں نہیں دی جایں گی۔ خرم دستگیر

پی آئی اے کے روزویلٹ اور فرانس میں موجود ہوٹل کو بیچ کر اس کے بحران سے نکلا جا سکتا ہے۔ علی رضا زیدی

پیپلز پارٹی عزیر بلوچ کے خلاف عدالت میں موجود مقدمات سے دستبردار نہیں ہو گی۔ سعید غنی

ہم نے دو ہزار تیرہ میں کراچی میں فوج کو بلانے کا مطالبہ عزیر بلوچ کی وجہ سے کیا تھا وہ بہت زیادہ قتل و غارت گری کر رہا تھا۔ علی رضا زیدی

عزیر بلوچ کیس میں انصاف نہیں ہو گا اسے خراب کر دیا جائے گا کیونکہ اس میں پیپلز پارٹی کے بہت سے وزرا کے نام آتے ہیں۔ علی رضا زیدی

پچھلے آٹھ سالوں سے سندھ میں پیپلز پارٹی کی حکومت ہے عزیر بلوچ کے سلسلے میں کچھ زمہ داری اس پر بھی عائد ہوتی ہے۔ خرم دستگیر

میری اسدعا ہے کہ سیاس جماعتیں قاتلوں اور بھتہ خوروں کو اپنی ٹوپی نہ پہننے دیں کیونکہ وہ قاتل ہیں۔خرم دستگیر

پیپلز پارٹی نے کبھی کسی مجرم کی حإایت نہیں کی سب جانتے ہیں کراچی میں ایم کیو ایم لوگوں کو قتل کرواتی ہے۔ سعید غنی

ایم کیوایم نے عباس حیدر رضوی کے زریعے خود عزیر بلوچ سے رابطہ کیا تھا کہ وہ ان کی جماعت کے لئیے کام کرے۔ سعید غنی

4 February, 2016 22:19


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

04-FEBURARY-2016

رینجرز کو ہمیشہ سول فورس اور سول ایڈمنسٹریشن کی مدد کے لئیے بلایا جاتا ہے۔رانا ثنااللہ کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

پی آئی اسے کے مرنے والے لوگ رینجرز کے سامنے نہیں تھے بلکہ ہجوم کے درمیان میں تھے۔ رانا ثنا اللہ

امید ہے کہ اگلے ایک دو روز میں یہ بات واضع ہو جائے گی کہ گولی چلانے والے کون لوگ تھے۔ رانا ثنا اللہ

رات کو ایک اجلاس ہوا جس میں وزیراعلی سندھ ڈی جی رینجرز اور دوسری ایجنسیوں کے لوگ تھے انہوں نے کہا ہے کہ رینجرز یا پولیس نے گولی نہیں چلائی۔ مولا بخش چانڈیو

مرنے والوں کی ایف آئی آر درج کروائی جائے گی اس سلسلے میں ان کے وارثوں سے رابطہ کیا گیا ہے۔ مولا بخش چانڈیو

ہم موجودہ صورت حال کا فائدہ اٹھانے کی کوشش نہیں کر رہے موجودی صورت حال حکومت نے پیدا کی ہے۔ عمران اسماعیل

پرویز رشید نے کہا تھا کہ پی آئی کے ورکرز نے ہڑتال ختم نہ کی تو دشمنوں والا سلوک کریں گے اور پھر کیا بھی گیا ہے۔ عمران اسماعیل

پی ٹی آئی نے پہلے سے پٹرول کی قیمتیں جتنی کم ہونی چاہئییں تھیں اتنی نہ کرنے پر احتجاج کا اعلان کیا ہوا تھا۔ عمران اسماعیل

پرویز رشید اور مسلم لیگ ن کے دوسرے وزرا کی طرف سے دھمکیاں دی جا رہی تھیں کہ پی آئی اے ورکرز نے ہڑتال ختم نہ کی تو ان کے پر کاٹ دیں گے۔ آصف حسنین

مسلم لیگ ن نے جب بھی دو تہائی اکثریت لی ہے اس نے کبھی بھی پارلیمنٹ کو اعتماد میں نہیں لیا ہے۔ آصف حسنین

پی آئی اے کے ورکرز کے تمام مطالبات مان لئیے گئے تھے انہوں نے کہا تھا کہ نجکاری نہیں ہونی چاہئیے حکومت نے ان کی بات مان لی تھی۔ رانا ثنا اللہ

خورشید شاہ نے پی آئی اے کے ورکرز کی ہڑتال پر حکومت کے خلاف جو الفاظ استعمال کئیے ہیں وہ مناسب نہیں ہیں۔ راناثناا للہ

میڈیا نے پیپلز پارٹی کو مفاہمت کی سیاست پر اتنا زچ کیا اسے مک مکا کہا اس لئیے وہ حکومت کے خلاف سخت رویہ اپنانے پر مجبور ہو گئی ہے۔ رانا ثنا اللہ

چوہدری نثار نے خود کہہ دیا ہے کہ حکومت اور پیپلز پارٹی کے درمیان مک مکا ہے۔ عمران ا سماعیل

پرویز رشید اور مسلم لیگ ن کے کچھ اور وزرا نے ایسے بیانات دئیے کہ جن سے اشتعال پیدا ہوا۔ مولا بخش چانڈیو

ہم نے پہلے بھی کئی بار کہا ہے کہ وزیراعظم کے کچھ ایسے ساتھی ہیں جو پٹرول کے ڈبے ہیں اور وہ آگ لگانے کی کوشش کرتے رہتے ہیں۔ مولا بخش چانڈیو

مسلم لیگ ن والے اپنے مخالفین کا مزاق اڑاتے ہیں انہیں یاد ہونا چاہئیے کہ ان کی حکومت کس طرح چل رہی ہے۔ مولا بخش چانڈیو

اپوزیشن نے پی آئی اے کے ہڑتالی ملازمین سے یہ نہیں کہا کہ ہڑتال نہ کریں ہم آپ کا ساتھ دیں گے آیں حکومت سے بات چیت کریں۔ رانا ثنا اللہ

جب بات کرنے کی کوشش کی جائے ہو جاتی ہے وزیراعظم نے کہا کہ ہڑتال کرنے والوں کو جیل میں ڈال دیں گے اور ان کی تنخواہ روک دیں گے۔ آصف حسنین

چوہدری نثار کے خلاف بھی ایف آئی آر کٹنی چاہئیے جنہوں نے پیچھے بیٹھ کر پی آئی اے ورکرز کا خون خرابہ کروایا ہے۔ آصف حسنین

میاں نواز شریف کہتے تھے کہ ن پا س سب سے بہتر اور تجربہ کار ٹیم ہے وہ اداروں کو ٹھیک کر دیں گے اب وہ ٹیم کہاں ہے۔ عمران اسماعیل

پی آئی اے کی ہڑتال کا سب سے زیادہ فائدہ وزیراعظم کے ایک ساتھی کی ائیر لائین کو ہوا ہے۔ عمران اسماعیل

وزیراعظم کے ساتھی کی ائیر لائین نے کراچی سے اسلام آباد تک کا کرایہ پچاس ہزار کر دیا ہے۔ عمران اسماعیل

حکومت کو دہشت گردی کو ختم کرنے کے لئیے بہت ظالمانہ کاروائیاں کرنا ہے۔ جنرل اعجاز اعوان

حکومت ابھی تک دہشت گردوں کے خلاف مفاہمانہ انداز میں بات کرتی ہے۔ اعجاز اعوان

جو انٹرنیشنل ایجنسیاں دہشت گردوں کی مدد کر رہی ہیں ان کے خلاف انٹرنیشنل طور پر احتجاج کرنے کی ضرورت ہے۔ اعجاز اعوان

اگر افغانستان اپنے ملک سے دہشت گردوں کی پناہ گاہوں کو ختم نہ کرے تو پھر پاکستان کو ان پر فضائی حملہ کر دینا چاہئیے۔ اعجاز اعوان

امریکہ نے بھی اپنے لوگوں کو محفوظ بنانے کے لئیے دوسرے ملکوں میں موجود دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا تھا۔ اعجاز اعوان

4 February, 2016 22:16


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

04-FEBURARY-2016

TOPIC- STRIKE OF PIA WORKERS & PM VISIT TO ISI HEAD QUARTERS

GUESTS- RANA SANA ULLAH, MOLA BAKHSH CHANDEO, IMRAN ASMAIL, ASIF HUSNAIN, GENERAL AJAZ AWAN

RANA SANA ULLAH OF PML-N said that the rangers are always called to help civil force and the civil management. He said that the killed workers of PIA were not in front of the rangers but they were in the middle of the procession. He said that hopefully in next one or two days it will be clarified that who fired the bullets.

He said that all the demands of PIA workers were met they asked not to privatize airline and the government accepted it. He said that the language Khursheed Shah used against the government in his statement was inappropriate. He said that the media humiliated PPPP on its policy of conciliation that they are forced to take tough stance against the government. He said that opposition parties did not say to the PIA workers that they are with them they should not strike and should have dialogues with the government.

MOLA BAKHSH CHANDEO OF PPPP said that a meeting was held last night CM, DG rangers and other agencies participated in it and they said that they did not fire the bullet. He said that the FIR of the dead will be registered and their families are being contacted. He said that Pervez Rasheed and some other ministers of PML-n gave such statements that they instigated the workers. He said that PPPP has stated before that some people around PM are like the petrol cans they always try to ignite the fire. He said that PML-N leaders try to ridicule their opponents they should keep in mind that how their government is surviving.

IMRAN ISMAIL OF PTI said that PTI is not trying to take the advantage of the current situation it is created by the government. He said that Pervez Rasheed said that PIA workers on strike will be treated like enemy and the government did exactly that. He said that PTI already had plans to protest on oil prices not decreased as much as should be.

He said that Ch Nisar himself has stated that there is a Muk Muka between PML-N and PPPP. He said that Nawaz Sharif said that he has best and experienced team he will fix the institutions now where those teams are? He said that the main beneficiary of PIA strike is the air line of one of the cronies of the PM. He said that the PM crony’s air line has increased the fair from Karachi to Islamabad up to fifty thousands rupees.

ASIF HUSNAIN OF MQM said that Pervez Rasheed and other ministers of the government were threatening that if the strike is not called off by the workers of PIA their wings will be cut. He said that whenever PML-N took two third majority it never takes the parliament into the confidence. He said that when someone tries to talk it does go through but the PM was threatening that he will put in jail the workers on strike and will stop their salaries. He said that a FIR should be registered against Ch Nisar as well who is responsible for the blood shed sitting in the back ground.

GENERAL (R) AJAZ AWAN said that the government needs to take ruthless steps to root out the terrorism from the country. He said that the government still talks in the manners of conciliation about the terrorists. He said that the international agencies that are helping the terrorists a protest should be lodged against them internationally. He said that if Afghanistan does not eradicate the sanctuaries of the terrorists in their country Pakistan should for air strike against them. He said that America also has targeted the hide outs of the terrorists in other countries to secure its people.