24 August, 2017 22:38


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

24-AUGUST-2017

پہلے امریکی کانگرس اور سینٹ میں پاکستان کے خلاف سخت زبان استعمال کی جاتی تھی لیکن ایگزیکٹو ایسا نہیں کرتی تھی لیکن اس وقت وہ سب ایک پیج پر ہیں۔ شاہ محمود قریشی کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

امریکہ کو بہت جلد احساس ہو گا کہ وہ غلطی کر رہا ہے۔

حامد کرزئی نے کہا ہے کہ امریکی پالیسی نہ افغانستان کہ مفاد میں ہے اور نہ اس سے امن آئے گا۔

بھارت اگر امریکہ کی گود میں بیٹھ گیا ہے تو روس ہمارے قریب آنا چاہتا ہے۔

خواجہ آصف نے امریکہ کا دورہ ملتوی کر کے بہت اچھا قدم اٹھایا ہے۔

ہمیں امریکہ کے ساتھ لڑنا نہیں ہے لیکن لیٹنا بھی نہیں ہے۔

ہم نے امریکہ کو کئی بار کہا ہے کہ بھارت کی افغانستان کے ساتھ سرحد نہیں ملتی ہم اس کی وجہ سے براہ راست متاثر ہوتے ہیں۔

ہم افغانستان کے اندر بھارت کے اثر رسوخ کو کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔

امریکہ پاکستان پر دہشت گردوں کی موجودگی کا الزام لگاتا ہے تو جو افغانستان میں موجود ہیں ان کی زمہ داری اس پر ہے۔

افغانستان کے اندر بھارتی اثر رسوخ ہماری ریڈ لائیں ہے ہم یہ کبھی ٹچ نہیں کرنے دیں گے۔

ہم افغانستان کے اندر بھارتی اثر کے خلاف لڑاتے ہوئے اپنے نوجوانوں کو قربان نہیں کر سکتے ان کے خون کا رنگ مختلف نہیں ہے۔

حکومت امریکی دھمکی کے مسئلے کو پارلیمنٹ میں لائے اس سے اس ہاتھ مظبوط ہوں گے ہم ساتھ دیں گے۔

اگر پارلیمنٹ ساتھ نہ دیتی تو ہم آج یمن کی دلدل میں پھنس چکے ہوتے۔

نواز شریف کہتے ہیں انہیں پانچ لوگوں نے ہٹا دیا وہ پانچ لوگ کوئی سڑک پر کھڑے ہوئے نہیں تھے سپریم کورٹ کے جج تھے۔

نواز شریف کہتے ہیں نیب کے سامنے پیش نہیں ہوں گے فیصلہ پہلے سے ہو چکا ہے یہ الزام لگانا عدلیہ کی توہین کرنا ہے۔

مسلم لیگ ن کے خواجہ آصف وزیرخارجہ نے کہا کہ

جس طرح اب پاکستان نے امریکہ سے افغانستان کے اندر موجود دہشت گردوں کے خلاف کاروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے ایسا ماضی میں نہیں کیا گیا۔

ہم کہتے ہیں کہ اگر افغان مہاجرین یا ان کے کسی کیمپ میں دہشت گرد ہیں تو اس کا بہترین حل یہ ہے کہ افغان مہاجرین کو واپس بھیج دیا جائے۔

ہمیں بتایں کہ حقانی پاکستان میں کس جگہ ہیں ہمارے ہیلی کاپٹر پر ساتھ چلیں ہم انہیں ختم کر دیتے ہیں لیکن ہمیں بتایں تو سہی کہ کہاں پر ہیں۔

تیس لاکھ افغان مہاجرین ہیں ان میں سے اکا دکا بندے کی وجہ سے پاکستان کو دہشت گردوں کی پناہ گاہ کہہ دینا درست نہیں ہے۔

افغانستان میں پکتیا کنڑ اور خوست ہر جگہ دہشت گردوں کی پناہ گاہیں ہیں جہاں سے پاکستان پر حملے ہو رہے ہیں۔

خیبر فور آپریشن کے تحت پاکستان نے داعیش کے خلاف افغان بارڈر کے ساتھ اللہ کے فضل سے مکمل کامیابی حاصل کی ہے یہ داعیش کہاں سے آئی ہے۔

افغانستان کے سات صوبوں میں اس وقت داعیش موجود ہے۔

افغانستان میں ڈرگ کی پیداوار میں سینتیس سو فیصد اضافہ ہوا ہے اور سو بلین ڈالر سے زیادہ کی ڈرگ ساری دنیا کو سپلائی ہو رہی ہے۔

ہماری انٹیلی جنس کے پاس داعیش کی مکمل تفصیلات ہیں اور الحمد للہ ہم ان کا پورا بندوبست کر رہے ہیں۔

امریکہ افغانستان میں ایک لاکھ فوج کے ساتھ کامیابی حاصل نہیں کر سکا تو بارہ ہزار کے ساتھ کیا حاصل کرے گا۔

میں پہلے امریکہ کے دورے پر جا رہا تھا لیکن اب میں نے وہ ملتوی کر دیا ہے اور چین اور روس جا رہا ہوں۔

میں پچھلے چار سال میں پانچ بار روس گیا ہوں ہمارے ان کے ساتھ تعلقات بہت اچھے ہو گئے ہیں۔

میں ایران بھی جا رہا ہوں وہ بھی افغانستان میں ایک سٹیک ہولڈر ہے۔

پیپلز پارٹی کے نوید قمر نے کہا کہ

امریکہ کا یہ کہنا کہ وہ پاکستان کو اربوں ڈالر کی امداد دیتا ہے ایک بھونڈی دلیل ہے۔

کولیکشن سپورٹ فنڈ کے تحت پاکستان کو کوئی خاص امداد نہیں ملتی۔

داعیش کا افغانستان کے اندر طالبان کے ساتھ اتحاد ہو چکا ہے اور یہ بات کل کے پاکستان کے لئیے بہت خطرناک ہے۔

امریکہ پاکستان کو قربانی کے بکرے کے طور پر استعمال کرنا چاہتا ہے ہمیں اس کے لئیے تیار رہنا ہو گا۔

ملک کی سلامتی کا مسئلہ ہوتا ہے تو پارلیمنٹ کے اندر تمام جماعتیں اکٹھی ہو جاتی ہیں۔

ہم نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلایا جائے تا کہ ہم دنیا کو اپنا اتحاد دکھا سکیں۔

وہ ساری چیزیں جو کل پیپلز پارٹی کے دور میں غلط تھیں آج حکومت کے لئیے ٹھیک ہو گئی ہیں۔

مسلم لیگ ن کے ملک احمد خان نے کہا کہ

کیا امریکہ چند دہشت گردوں کی بنیاد پر پاکستان کے ساتھ تعلقات رکھے گا یہ بڑی حیرت کی بات ہے۔

امریکی دھمکیوں کی وجہ سے پاکستان کے لوگوں میں بہت بے چینی پائی جاتی ہے۔

امریکی دھمکی کی ایک وجہ پاکستان کے چین کے ساتھ تعلقات بھی ہیں۔

نواز شریف کی تقریروں کو عدلیہ مخالف کہنا درست بات نہیں ہے۔

فیصلے کی وجہ پر بات کرنا عدلیہ مخالف بات نہیں کہ جا سکتی۔

سپریم کورٹ کے یوسف رضا گیلانی کو نکالنے پر مسلم لیگ ن کا موقف درست نہیں تھا ہم یہ تسلیم کرتے ہیں۔

http://naeemmalik.wordpress.com/

Advertisements

National Security Committee Response to Donald Trump #Pakistan


The National Security Committee in its meeting on 24 August 2017 discussed the Trump Administration’s South Asia Strategy.

The Committee out rightly rejected the specific allegations and insinuations made against Pakistan. It was observed that to scapegoate Pakistan will not help in stabilizing Afghanistan. In fact, being its immediate neighbor, Pakistan has an abiding interest in peace and stability in Afghanistan.

The committee observed that Pakistan had to manage the blowback of a protracted conflict in Afghanistan that resulted in deluge of refugees, flow of drugs and arms and more recently in the shape of terrorist safe havens in eastern Afghanistan from where anti-Pakistan terrorist groups continue to operate and launch attacks inside Pakistan. The fact remains that the complex issues and internal dynamics inside Afghanistan pose a grave challenge not only to Pakistan but to the broader region and the international community.

While noting the US commitment to continue to shoulder the burden of Afghanistan and reverse the expanding ungoverned spaces in the country, the Committee observed that Pakistan has consistently supported all international efforts for a stable and peaceful Afghanistan and has also committed more than a billion US dollars for infrastructure and social development in that country.

Over the years, Pakistan has worked with both the United States and Afghanistan to promote peace through a politically negotiated outcome which, in Pakistan’s view, remains the best option to bring stability to this war torn country. A prolonged military campaign in Afghanistan has resulted in destruction and killing of hundreds of thousands of Afghan civilians.

Pakistan has also endorsed and supported all Afghan owned and Afghan led initiatives for peace.

It is Pakistan’s expectation that any strategy adopted to stabilize Afghanistan will succeed to end this protracted conflict and usher in an era of peace in the country paving way for the dignified return of millions of Afghan refugees residing in Pakistan for which we are willing to extend all possible cooperation.

More specifically, we would like to see effective and immediate US military efforts to eliminate sanctuaries harboring terrorists and miscreants on the Afghan soil including those responsible for fomenting terror in Pakistan. The Afghan war cannot be fought in Pakistan.

On its own part, Pakistan has taken indiscriminate actions against all terrorist networks and sacrificed tens of thousands of troops and civilians in this fight. The demonstrated security improvement inside Pakistan would not have been possible without eliminating all terrorist hideouts. Moreover, successful cooperation with the US in the past against the common enemy, terrorism, reflects Pakistan’s unflinching commitment to eliminate this menace.

The committee stressed that instead of any financial or material assistance, there should be understanding and recognition of our efforts, contributions and sacrifice of thousands of Pakistanis and over 120 billion US dollars of economic losses. We consider the lives of the citizens of other countries as sacrosanct as those of our own and, therefore, Pakistan is committed to not allowing its soil to be used for violence against any other country. We expect the same from our neighbours. The claims of Billions of Dollars in aid to Pakistan are also misleading to the extent that the reimbursements to Pakistan since 2001 only account for part of the cost of ground facilities and air corridors used by the United States for its operations in Afghanistan, rather than any financial aid or assistance.

Pakistan’s effective counter-terrorism operations have clearly proved that tide of terrorism can be reversed and we are willing to share our experience with both the US and Afghanistan. This would require working together and focusing on core issues of eliminating safe havens inside Afghanistan, border management, return of refugees and reinvigorating the peace process for a political settlement in Afghanistan.

The Committee stressed that India cannot be a net security provider in the South Asia region when it has conflictual relationships with all its neighbours and is pursuing a policy of destabilizing Pakistan from the east and the west. The Committee expressed deep concern at Indian policies inimical to peace in the region including interference in the internal affairs of neighbouring countries and using terrorism as an instrument of state policy. The Committee condemned state inflicted repression on the people of Indian Occupied Jammu and Kashmir and reiterated Pakistan’s continued diplomatic, political and moral support for their struggle for self determination.

The Committee reaffirmed Pakistan’s resolve to protect its sovereignty and territorial integrity.

The Committee underscored that as a responsible Nuclear weapon state, Pakistan has in place a robust and credible command and control system which has been universally recognized and appreciated.

Pakistan will continue to extend all possible cooperation to the international community for achieving the common objectives of peace and stability in Afghanistan and in the broader region.

Islamabad

24 August 2017

24 August, 2017 12:20


NML-AUG23-640x360-280x170.jpg
https://www.youtube.com/watch?v=x8wTUU0QrJA

https://www.samaa.tv/videos/nadeemmalik/2017/08/nadeem-malik-live-samaa-tv-23-aug-2017/

http://siasatkorner.com/threads/nadeem-malik-live-sharif-family-aur-nab-23rd-august-2017.383189/

NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

23-AUGUST-2017

TOPIC- DONALD TRUMP THREAT & NAB REFERENCES

GUESTS- SHEIKH RASHEED AHMED, NAEEM UL HAQ, MIFTAH ISMAIL, GENERAL (R) GHULAM MUSTAFA

SHEIKH RASHEED AHMED OF AML said that India that was once the member of Non Alliant Movement has become the puppet of America. He said that the politicians are corrupt and incompetent so the army chief has rebutted timely and appropriately to America. He said that Afghanistan has never been a friend to Pakistan. He said that a new block in the world is in the process of formation our foreign office is incompetent but our nation is alive.

He said that Pakistan’s relationships with China are higher than Himalaya and army is keeping the eye on the situation. He said that India cannot play any role in Afghanistan it cannot go there bypassing Pakistan.

NAEEM UL HAQ OF PTI said that Nawaz Sharif is trying to delay the cases in NAB by putting pressure on the chairman that is his own man. He said that Shahid Khaqan Abbasi is nothing but a puppet PM. He said that chairman NAB is offered to be appointed as the ambassador in France and this offer is given through Fawad Hassan Fawad.

He said that only six American soldiers are killed in Afghanistan this year what kind of threat they are facing there? He said that Afghan government is involved in terrorism inside Pakistan and Balochistan with the help of India. He said that half of Afghanistan is under the control of Taliban and Americans are not daring to go there. He said that America betrayed Pakistan and is not our friend. He said that the country is still being ruled by Nawaz Sharif and he is taking the country to the point of no return.

MIFTAH ISMAIL OF PML-N said that foreign office has given its reaction on the statement of Donald Trump. He said that Pakistan does not need to provide shelter to Taliban half of Afghanistan is under their control. He said that America requested Pakistan to help in negotiations with Taliban and on the other hand kept attacking on them. He said that nobody forced us to work for America it is our own mistake. He said that Pakistan is fixing fence alongside Afghan border but in our own territory. He said that India has problem with Sikkim, Bhutan, Myanmar, Bangladesh Sri Lanka and Pakistan every single country of our region.

GENERAL (R) GHULAM MUSTAFA said that America should get one clear message from Pakistan and should make the decision that is in the best interest of the country. He said there is nothing to worry about Pakistan has got the victory in the war against terrorism. He said that there are people in the government hat are talking against Pakistan. He said that Mahmood Achakzai has given a statement against Pakistan on the issue of Kashmir.

He said that Sharif family is not appearing infront of NAB and it was not expected from them. He said that the avoiding of Sharif family from facing the cases in NAB against them will confirm the allegations of JIT and the SC. He said that threats of Nawaz Sharif towards the institutions are taking the country to anarchy. He said that there is information that the government was behind the tumultuous of the lawyers in Lahore.

http://naeemmalik.wordpress.com/

24 August, 2017 11:45


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

23-AUGUST-2017

بھارت جو ہمیشہ غیر جانبدار ملکوں میں شامل رہا اس وقت امریکہ کے ہاتھ کی گھڑی اور جیب کی چھڑی بن چکا ہے۔عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

جب سیاست دان نا اہل اور کرپٹ ہوں اور خود کو قانون سے بال تر سمجھیں تو آرمی چیف نے امریکہ کو بر وقت اور ٹھیک جواب دیا ہے۔

افغانستان کبھی بھی پاکستان کا دوست نہیں رہا۔

دنیا میں اب نیا بلاک بننے جا رہا ہے اگر ہمارا فارن آفس نکما ہے تو اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ قوم مردہ ہے۔

پاکستان کے چین کے ساتھ تعلقات ہمالیہ سے بلند ہیں پاک آرمی تمام صورت حال پر نظر رکھے ہوئے ہے۔

بھارت افغانستان میں کوئی کردار ادا نہیں کر سکتا واہگہ علاوہ وہ ہمارے اوپر سے افغانستان نہیں جا سکتا۔

مسلم لیگ ن کے مفتاح اسماعیل نے کہا کہ

وزارت خارجہ نے ڈونلڈ ٹرمپ کے بیان پر اپنا رد عمل دیا ہے۔

پاکستان کو طالبان کو پناہ دینے کیا ضرورت ہے آدھا افغانستان تو ان کے قبضے میں ہے۔

ہمیں امریکہ کہتا رہا کہ طالبان سے مزاکرات کروا دو اور خود ان پر حملے کرتا رہا۔

اگر کراس بارڈر ہو رہا ہے تو صرف ٹی ٹی پی کے لوگ افغانستان سے آ کر پاکستان میں دہشت گردی کر رہے ہیں۔

ہم افغانستان کے بارڈر پر باڑ لگا رہے ہیں اور باڑ ہم اس طرف اپنے علاقعے میں لگا رہے ہیں۔

بھارت کا سکم بھوٹان بنگلہ دیش سری لنکا افغانستان پاکستان سب کے ساتھ مسئلہ ہے۔

امریکہ کے لئیے کام کرنا ہماری غلطی تھی ہمارے سر پر کسی نے بندوق نہیں رکھی ہوئی تھی۔

پی ٹی آئی کے نعیم الحق نے کہا کہ

نواز شریف کی طرف سے پوری کوشش کی جا رہی ہے کہ نیب کے چیرمین جو ان کے اپنے آدمی ہیں پر دباؤ ڈال کر معاملہ کو کھینچا جا سکے۔

شاہد خاقان عباسی کی حکومت کی حیثیت ایک کٹھ پتلی سے زیادہ نہیں ہے۔

نیب کے چیرمین کو فرانس میں سفیر لگانے کی پیشکش کی گئی ہے اور یہ پیشکش فواد حسن فواد نے کی ہے۔

اس سال افغانستان میں امریکہ کے صرف چھ فوجی مارے گئے ہیں انہیں وہاں کونسا خطرہ ہے۔

افغان حکومت بھارت کے ساتھ مل کر پاکستان کے اندر اور بلوچستان میں دہشت گردی کروا رہی ہے۔

جو آدھا افغانستان طالبان کے قبضےمیں ہے امریکہ کی جرات نہیں ہے کہ وہ وہاں جا سکے۔

امریکہ نے پاکستان کے ساتھ دھوکہ کیا ہے وہ ہمارا دوست نہیں ہے۔

اب بھی حکومت نواز شریف کی ہے وہ ایسی ہدایات دے رہے ہیں کہ ملک پوائنٹ آف نو ریٹرن کی طرف جا رہا ہے۔

جنرل ریٹائرڈ غلام مصطفی نے کہا کہ

امریکہ کو پاکستان سے ایک اور واضع آواز جانی چاہئیے اور وہ فیصلہ کرنا چاہئیے جو پاکستان کے مفاد میں ہو۔

ہمیں گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے اللہ کے فضل سے ہم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ جیت لی ہے۔

حکومت میں کچھ ایسے لوگ بھی شامل ہیں جو پاکستان کے اندر بیٹھ کر پاکستان کے خلاف بات کر رہے ہیں۔

محمود اچکزئی نے کشمیر کے مسئلے پر پاکستان کے خلاف بیان دیا ہے۔

شریف خاندان نیب کے سامنے پیش نہیں ہو رہا ان سے ایسی توقع نہیں تھی۔

شریف خاندان کے پیش نہ ہونے سے جے آئی ٹی اور سپریم کورٹ کے الزامات کی تصدیق ہو جائے گی۔

شریف خاندان اداروں کا للکار کے ملک میں انرکی کی صورت حال کو انارکی کی طرف لے جا رہی ہے۔

یہ بھی اطلاعات ہیں کہ لاہور میں وکلا کے احتجاج کے پیچھے بھی حکومت کے لوگوں کا ہاتھ تھا۔

http://naeemmalik.wordpress.com/